punjab food authority

فوڈ اتھارٹی نے بوسال میں چھاپہ مار کر 1550 لیٹر جعلی اور مضر صحت دودھ والا سفید محلول تلف کر دیا

گوجرانوالہ: خوراک کے نام پر بیماریاں پھیلانے والوں کے خلاف زیرو ٹالرنس پالیسی کے تحت کارروائیاں جاری ہیں۔ ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی عاصم جاوید کی ہدایات پر فوڈ سیفٹی ٹیموں نے گوجرانوالہ کے علاقے کھیالی میں واقع اچار یونٹ پر کارروائی کرتے ہوئے 500 کلو گرام غیر معیاری اور فنگس سے متاثرہ اچار تلف کر دیا اور بھاری جرمانہ عائد کر دیا۔

دوسری جانب منڈی بہاؤالدین کے علاقے بوسال میں ملک کولیکشن سنٹرز پر چھاپے مار کارروائیاں کرتے ہوئے 1550 لیٹر جعلی و مضر صحت دودھ نما سفید محلول تلف کردیا.

دوران چیکنگ موقع سے دودھ کے پاؤڈر کے تھیلے بھی برآمد ہوئے جن سے دودھ بنایا جا رہا تھا۔ جدید لیکٹوسکن کے ساتھ اسپاٹ ٹیسٹ میں پانی کی آلودگی اور قدرتی چربی کی کمی کا پتہ چلا۔ دوسری جانب گوجرانوالہ میں کارروائی کے دوران نیلے ڈرموں میں بغیر ڈھانپے گلے سڑے پھل اور سبزیاں برآمد ہوئیں۔ اچار پر پھپھوندی، کیڑے اور مکھیاں پائی گئیں۔

ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی عاصم جاوید نے بتایا کہ جرمانہ ضروری ریکارڈ کی عدم دستیابی اور صفائی کے انتہائی ناقص انتظامات پر کیا گیا۔ پرکشش پیکنگ کے ساتھ اچار کے نام پر فنگس اور کیمیکل سے گلے ہوئے پھل مہنگے داموں فروخت کیے جا رہے تھے۔ غذائیت سے بھرپور خوراک کے نام پر دھوکہ دہی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

اپنا تبصرہ لکھیں