price control

پرائس مجسٹریٹس کے چھاپے، مختلف دکانداروں اور سٹاکسٹ کو 12 لاکھ 91 ہزارروپے کے جرمانے

ڈپٹی کمشنر محمد شاہد نے کہا ہے کہ حکومت کی واضح ہدایات کی روشنی میں تمام اشیائے خوردونوش بالخصوص آٹا، چینی ، دالیں، پھلوں، سبزیوں کے مقرر کردہ نرخوں پر عملدرآمد کیلئے تمام ممکنہ اقدامات کو یقینی بنانا ضلعی انتظامیہ کی اولین ترجیح ہے، انہوں نے کہا کہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس روزانہ کی بنیاد پر مارکیٹ کے دورے کر کے اپنی کارکردگی کو بہتر بنائیں، بہتر کارکردگی کا مظاہرہ نہ کرنے والے پرائس مجسٹریٹس کے خلاف کاروائی کی جائے گی۔

منڈی بہاوالدین ( ایم.بی.ڈین نیوز 21اپریل 2022)ان خیالات کااظہار انہوں نے پرائس مجسٹریٹس کی کارکردگی کے حوالے سے پرائس کنٹرول کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو ڈاکٹر احسان الحق ضیاء، تینوں تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز منڈی بہاﺅالدین کاشف جلیل، پھالیہ محمد عرفان ہنجرا، ملکوال عثمان غنی، ایڈیشنل ڈائریکٹر لائیو سٹاک ڈاکٹر محمد ممتاز بیگ، ڈی او انڈسٹریز رانا محمد سعید کے علاوہ مجسٹریٹس صاحبان اور متعلقہ محکموں کے افسران بھی موجود تھے۔

قبل ازیں ملٹی میڈیا کے ذریعے اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ یکم اپریل سے لے کر 20 اپریل 2022 تک 28مجسٹریٹس نے 9ہزار 324 انسپکشنز کیں اور پرائس ایکٹ کی خلاف ورزیاں پائے جانے پرمختلف دکانداروں ، بڑے سٹوروں اور سٹاکسٹ کو 12 لاکھ 91 ہزارروپے جرمانے کئے گئے۔ 10 افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کر وا کر9 افراد کوگرفتار کروا دیا گیا۔

آج پھل، سبزی و گوشت کی تازہ ترین ریٹ لسٹ دیکھیں

جس پر ڈپٹی کمشنر محمد شاہد نے پرائس مجسٹریٹس صاحبان کی کارکردگی کو غیر تسلی بخش قرار دیتے ہوئے واضح ہدایت کی کہ کہ وہ اپنی کارکردگی بہتر بنائیں کیونکہ ان کی حقیقی کارکردگی اشیاءخوردونوش کی قیمتوں کو کنٹرول میں رکھ کر عوام الناس کو فائدہ پہنچانا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ حکومت ضروری اشیائے خوردونوش، پھلوں ، سبزیوں کی قیمتوں میں استحکام لانے کیلئے پوری طرح سنجیدہ ہے اورموجودہ حالات میں اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کو عوام الناس کی قوت خرید کے مطابق کرنے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لا رہی ہے۔

انہوں نے پرائس مجسٹریٹ کو ہدایت کی کہ گراں فروشوں کے خلاف بلا تفریق آپریشن کیا جائے ، عام بازاروں اور مارکیٹوں میں اشیاء ضروریہ کی ریٹ لسٹ اور ریٹ بورڈ کو نمایاں جگہوں پر آویزاں کروائیں اور جو دکاندار اس پر عملدرآمد نہ کرے اس کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں