khaad dealer in mandi bahauddin

کھاد کی ذخیرہ اندوزی، سمگلنگ اور زائد قیمت پر فروخت کسی بھی صورت برداشت نہیں کیاجائے گا، شاہد

ڈپٹی کمشنر محمد شاہد نے کہا ہے کہ زراعت ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے، کھادوں کی ذخیرہ اندوزی، سمگلنگ اور مقرر کردہ نرخوں سے زائد قیمت پر فروخت کو کسی بھی صورت برداشت نہیں کیاجائے گا، ایسی شکایات موصول ہونے پر پرائس ایکٹ کے تحت جرمانے کے ساتھ گرفتاری بھی عمل میں لائی جائے گی۔

منڈی بہاوالدین( ایم.بی.ڈین نیوز 9مئی 2022 ) ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈی سی آفس میں مارکیٹ میں مقررہ قیمت پر کھادوں کی فراہمی کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں اسسٹنٹ کمشنر منڈی بہاوالدین کاشف جلیل، ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت شیخ محمد اقبال ، کھاد ڈیلرز اور دیگر متعلقہ محکموں کے افسران بھی موجود تھے۔

یہ بھی پڑھیں: اسسٹنٹ کمشنر نے پھالیہ اور ملکوال میں سٹاک کی گئی 10،000گندم کی بوریاں پکڑ لیں

ڈپٹی کمشنر نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کسان کی خوشحالی کا مطلب ملک کی مجموعی ترقی ہے اور کسان کو سہولتیں فراہم کئے بغیر زرعی شعبے میں ترقی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں کیا جا سکتا۔انہوں نے کھاد ڈیلروں کو ہدایت کی کہ وہ کھاد کے مقررکردہ نرخ بل بورڈ پر نمایاں جگہوں پر آویزاں کریں اور کھادوں کے سٹا ک کا ریکارڈ رکھیں۔انہوں نے ڈپٹی ڈائریکٹر کو ہدایت کی کہ وہ روزانہ کی بنیاد پر کھاد ڈیلروں کے سٹاک اور ریکارڈ کو چیک کریں۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کسانوں کو معیاری کھادوں کی مقررہ قیمتوں پر فراہمی کے حوالے سے بہترین اقدامات اٹھا رہی ہے۔حکومتی پالیسی کے تحت کاشتکاروں کے مفاد کا بھر پور تحفظ کرتے ہوئے کسی کو بھی مہنگی کھاد بیچنے، سمگلنگ اور ذخیرہ اندوزی کی ہر گز اجازت نہیں دی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں