کسی کو مہنگی کھاد کی فروخت اور ذخیرہ اندوزی سے کسانوں کا استحصال نہیں کرنے دیا جائے گا، خالد خان

ڈپٹی کمشنر عثمان خالد خان نے کہا ہے کہ زراعت ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے ،کسان خوشحال ہو گا تو ملک ترقی کرے گا، انہوں نے کہا کہ کسی کو بھی مہنگی کھادوں کی فروخت اور ذخیرہ اندوزی سے کسانوں کا استحصال نہیں کرنے دیا جائے گا، ایسی شکایات موصول ہونے پر پرائس ایکٹ کے تحت جرمانے کے ساتھ گرفتاری بھی عمل میں لائی جائے گی۔

منڈی بہاوالدین ( ایم.بی.ڈین نیوز 31مئی 2022) ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈسٹرکٹ ایگری کلچرل ایڈوائزری کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو ڈاکٹر احسان الحق ، اسسٹنٹ کمشنر منڈی بہاوالدین کاشف جلیل، اسسٹنٹ کمشنر پھالیہ محمد عرفان ہنجرا، ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت (توسیع) شیخ محمد اقبال، ایڈیشنل ڈائریکٹر لائیو سٹاک ڈاکٹر محمد ممتاز بیگ، کسان بورڈ کے نمائندوں کے علاوہ دیگر متعلقہ افسران بھی شریک تھے۔

قبل ازیں ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت (توسیع) شیخ محمد اقبال نے اجلاس کوبریفنگ دیتے ہوئے معیاری کھادوں کی مقررہ قیمتوں پر فراہمی کے حوالے سے بتایا کہ مارکیٹ میں سونا یوریا ایک ہزار 850 سے ایک ہزار 870 روپے بوری ہے ۔اجلاس میں فصلوں کی موجودہ صورتحال، پانی اور بجلی کی بلا تعطل فراہمی اور سرکاری نرخوں پر کھادوں کی فراہمی کو یقینی بنانے کے حوالے سے گفت و شنید کی گئی۔

یہ بھی پڑھیں: حکومت نے کھاد کی قیمت میں389 روپے کمی کا نوٹیفکیشن واپس لے لیا

ڈپٹی کمشنر عثمان خالد خان نے کہا کہ کسان کی خوشحالی کا مطلب ملک کی مجموعی ترقی ہے، کسان کی خوشحالی اور زرعی معیشت کی مضبوطی لازم وملزوم ہیں اور کسان کو سہولتیں فراہم کئے بغیر زرعی شعبے میں ترقی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کسانوں کو معیاری کھادوں کی مقررہ قیمتوں پر فراہمی اور معیاری زرعی ادویات کی مقررہ قیمتوں پر فراہمی کے حوالے سے بہترین اقدامات اٹھا رہی ہے۔

حکومتی پالیسی کے تحت کاشتکاروں کے مفاد کا بھر پور تحفظ کرتے ہوئے کسی کو بھی مہنگی کھاد بیچنے اور ذخیرہ اندوزی کی ہر گز اجازت نہیں دی جائے گی۔اس موقع پر کسان بورڈ کے نمائندوں نے کسانوں کے مسائل اور ان کے حل کیلئے گزارشات بھی پیش کیں جس پر ڈپٹی کمشنر نے متعلقہ محکموں کے افسران کو گزارشات حل کرنے کی ہدایت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں