nadra chairman

قومی شناختی کارڈ کا نمبر 4 ہندسوں کا ہوجائےگا

چیئرمین نادرا طارق ملک نے اعلان کیا ہے کہ پاکستان کے ہرشہری کو ایک سال کے اندر اپنا سرکاری ڈیٹا چیک کرنےکا اختیارمل جائےگا جبکہ قومی شناختی کارڈ کے نمبر کو 4 ہندسوں تک محدود کرنے کی کوشش جاری ہے۔

اسلام آباد میں گزشتہ روز نیشنل ڈیٹٓ پرائیویسی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے ذاتی معلومات تک غیر مجاز رسائی کے مسئلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ شہریوں سے متعلق نادرا کا ڈیٹا کسی ادارے کو اپنے پاس محفوظ کرنے یا منی ڈیٹا بینک بنانے کی کوئی اجازت نہیں۔

چیئرمین نادرا نے یہ بھی اعلان کیا کہ ان کا ادارہ قومی شناختی کارڈ نمبر 13 کے بجائے 4 ہندسوں تک لانے کی کوشش کر رہا ہے۔ طارق ملک نے کہا اس بات کی بھی کوشش جاری ہے کہ شہریوں کو یہ معلوم کرنے کا حق دیا جائے کہ ان کا ڈیٹا کس نے چیک کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایف بی آر یا کوئی بینک اپنی ضرورت کے تحت اگر ڈیٹا چیک کرتا ہے تو وہ بھی معلوم ہوجایا کرے گا۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وزیر انسانی حقوق شیریں مزاری نے سوشل میڈیا پر نازیبا مواد کو بڑا چیلنج قرار دیتے ہوئے کہا کہ بچوں سے زیادتی تب رکے گی جب سوچ بدلے گی۔ شیریں مزاری نے حکومت کی جانب سے صحافیوں کی فون کالز ٹریس کیے جانے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ صحافیوں کی فون کالز ٹریس کرنا حکومت کی پالیسی نہیں۔

انہوں نے کہا کہ اگر کوئی صحافی یہ سمجھتا ہے کہ اس کی کال ٹریس ہو رہی ہے تو عدالت اور ثبوت پیش کرے

اپنا تبصرہ بھیجیں