malakwal railways

ڈویژنل سپرنٹنڈنٹ ریلویز کی ملکوال آمد، صحافیوں کے سوال کے جواب دئیے بغیر چلتے بنے

ملکوال(سکندر گوندل+صفرعلی خان) ڈویژنل سپرنٹنڈنٹ ریلویز راولپنڈی انعام اللہ کا سینکڑوں ملازمین وافسران کے ہمراہ گزشتہ روز دورہ، پنڈدادنخان تا ملکوال اور سرگودہا ریلوے سیکشنز کی عرصہ اڑھائی سال سے بند ٹرینوں کوچلانے کے عوامی مطالبہ پر محض لولی پاپ دے کر چلتے بنے.

تفصیلات کے مطابق ڈی ایس ریلوے راولپنڈی انعام اللہ نے گزشتہ روز اپنی سپیشل ٹرین پر حکومتی لاکھوں روپے خرچ کر کے لالہ موسیٰ ، منڈی بہاﺅالدین، ملکوال سرگودہا سیکشن کا دورہ کیا ، ملکوال ریلوے جنکشن پر جب میڈیا اورانجمن تاجران کے وفد نے ملاقات کی اور ڈی ایس ریلوے انعام اللہ سے مطالبہ کیاکہ اڑھائی سال قبل کورونا وائرس کی وجہ سے حکومت نے ریل سروس معطل کر دی تھی جس کے باعث ملکوال سے پنڈدادنخان، سرگودھا اور لالہ موسیٰ سیکشن پر چلنے والی ٹرینیں بند کر دی گئیں جوتاحال بحال نہ ہوسکیں جس وجہ سے ملکوال سے مذکورہ علاقوں کی طرف سفر کرنے والے ہزاروں مسافر اس محفوظ اور سستی سفری سہولت سے محروم ہو چکے ہیں

جبکہ ٹرینوں کی بندش کی وجہ سے پنڈدادنخان اور ملکوال کی تجارتی منڈی بھی بری طرح متاثر ہوئی جس سے تاجروں کا معاشی قتل اڑھائی سال سے ہو رہا ہے،نیزپنڈدادنخان تا ملکوال پسنجر ٹرین اور سرگودہا تا لالہ موسیٰ دھماکہ ایکسپریس کی بندش سے محکمہ ریلوے کو لاکھوں روپے ماہانہ مالی نقصان ہو رہا ہے لہٰذا پنڈدادنخان تا ملکوال اور سرگودہا سے لالہ موسیٰ دھماکہ ایکسپریس بحا کی جائیں۔اس عوامی مطالبہ پر ڈی ایس ریلوے انعام اللہ نے اہل علاقہ کو لولی پاپ دیتے ہوئے پہلے تو یہ غیرمنطقی بات کی کہ کرونا کی وجہ سے بند کی گئی ٹرینیں اور انکے انجن ناکارہ ہو چکے ہیں

لیکن جب صحافی نے سوال کیا کہ آپ حکومتی لاکھوں روپئے خرچ کر کے اسپیشل ٹرینوں میں دورے کرتے ہیں تو اسپر ڈی ایس ریلوے انعام اللہ نے کہا کہ پنڈدادنخان تاملکوال اور سرگودہا سیکشن کی ٹرینیں ڈیڑھ سال تک بحال کریں گے۔اس پر تاجر برادری اور اہل علاقہ میں غصہ کی لہر دوڑ گئی اور لوگوں نے کہا کہ اگر جلدی یہ ٹرینیں بحال نہ کی گئیں تو آئندہ جب بھی کوئی ریلوے افسر آیا اسکے خلاف احتجاجی مظاہر ہ کیا جائے گا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں