educators recruitment in sindh

تعلیمی اداروں میں یکم اکتوبر تک چھٹیوں کی افواہوں پر این سی او سی نے وضاحت جاری کر دی

یکم اکتوبر تک تعلیمی اداروں کی بندش کی خبریں جھوٹی ہیں، صوبہ پنجاب ، خیبرپختونخوا اور اسلام آباد کے تعلیمی ادارے 15 ستمبر تک بند ہیں۔نیشنل کمانڈ اینڈ سنٹر

اسلام آباد (تازہ ترین۔ 14ستمبر2021ء) نیشنل کمانڈ اینڈ سنٹر نے تعلیمی اداروں میں یکم اکتوبر تک چھٹیوں کی خبروں کی تردید کر دی ہے۔اپنے ایک بیان میں این سی او سی نے کہا کہ یکم اکتوبر تک تعلیمی اداروں کی بندش کی خبریں جھوٹی ہیں۔بیان میں کہا گیا کہ صوبہ پنجاب ، خیبرپختونخوا اور اسلام آباد کے تعلیمی ادارے 15 ستمبر تک بند ہیں۔اس حوالے سے نظرثانی کے متعلق مزید کوئی بھی فیصلہ آفیشل ذرائع کے زریعے جاری کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: حکومت کا دسویں اور بارہویں کلاس کے تمام طلبا کو پاس کرنے کا فیصلہ

جب کہ وزیر تعلیم شفقت محمود نے کورونا کی وجہ سے بند تمام تعلیمی ادارے جلد از جلد کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ چونکہ تعلیمی شعبے میں وسیع پیمانے پر ویکسینیشن ہوچکی ہے ، تعلیمی ادارے جلد از جلد دوبارہ کھلنے چاہئیں۔ اس سلسلے میں ایک سفارش این سی او سی کو کروں گا۔

واضح رہے کہ چند روز قبل نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر(این سی اوسی) نے کورونا پابندیوں میں توسیع کا فیصلہ کیا تھا۔این سی او سی کی جانب سے جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا تھا کہ24 حساس اضلاع میں تعلیمی ادارے مزید ایک ہفتے کیلئے پندرہ ستمبر تک بند رہیں گے، توسیع کا فیصلہ کورونا کی صورتحال اور ہیلتھ سسٹم پر دباؤ کے باعث کیا گیا۔ وفاقی وزیر اور چیئرمین این سی اوسی اسد عمر کی زیرصدارت اعلٰی سطحی اجلاس ہوا، جس میں کورونا پھیلاؤ کی صورتحال، کیسز کی شرح، ایس اوپیز پر عملدرآمد سمیت ویکسی نیشن کی رفتار کا جائزہ لیا گیا۔

اجلاس میں این سی اوسی نے کورونا پابندیوں میں توسیع کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ24 حساس اضلاع میں تعلیمی ادارے مزید ایک ہفتے کیلئے بند رہیں گے، توسیع کا فیصلہ کورونا کی صورتحال اور ہیلتھ سسٹم پر دباؤ کے باعث کیا گیا۔ اس سے قبل 29 اگست کو کورونا پابندیوں کا دائرہ 13اضلاع سے بڑھا کر 27 اضلاع تک کیا گیا تھا اور پابندیوں کا اطلاق 4 سے 12 ستمبر تک کیا گیا تھا۔اب ملک بھر کے 24 اضلاع میں کورونا پابندیوں میں ایک ہفتے کی توسیع کا فیصلہ کیا گیا ہے، اسلام آباد، پنجاب کے 11اضلاع، خیبرپختونخواہ کے 9، سندھ ، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کے دو، دواضلاع شامل ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں