مہنگی کھاد بیچنے پر 2 افراد کے خلاف مقدمہ درج، ڈیڑھ لاکھ روپے کے جرمانے

منڈی بہاﺅالدین( ایم.بی.ڈین نیوز 31اگست2021 ) ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو توقیر الیاس چیمہ نے کہا ہے کہ کسان ہماری اقتصادیات کا بڑا مرکزی حصہ ہیں، ایڈوائزری کمیٹی میں شامل تمام محکمہ جات کسانوں کے ساتھ ایک مربوط رابطہ قائم کریں، انہوں نے کہاکہ وزیراعظم پاکستان کے زرعی ایمرجنسی کے 5 سالہ پروگرام کیلئے 309 ارب رکھے گئے ہیں، زیادہ سے زیادہ پیداوار اور آمدن میں اضافے کیلئے کاشت کاروں کو فصلوں پر سبسڈیز بھی فراہم کی جا رہی ہیں ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج یہاں ڈپٹی کمشنر آفس میں ضلعی زرعی ایڈوائزری اور ٹاسک فورس کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت (توسیع) شیخ محمداقبال، ڈپٹی ڈائریکٹر لائیو سٹاک پھالیہ ڈاکٹر مسعود ، ڈپٹی ڈائریکٹر واٹر مینجمنٹ، کسان بورڈ کے نمائندوں کے علاوہ دیگر متعلقہ افسران بھی شریک تھے۔

قبل ازیں ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت (توسیع) شیخ محمد اقبال نے اجلاس کوبریفنگ دیتے ہوئے معیاری کھادوں کی مقررہ قیمتوں پر فراہمی اور معیاری زرعی ادویات کی مقررہ قیمتوں پر فراہمی کے حوالے سے آگاہ کیا۔انہوں نے بتایا کہ مارکیٹ میں سونا ڈی اے پی کی بوری 6،039 روپے، ایف ایف سی ڈی اے پی 5،989 روپے، اینگرو ڈی اے پی 5،834 روپے اور سر سبز ڈی اے پی 5،990 روپے ہے۔

انہوں نے بتایا کہ مہنگی کھادیں اور زرعی ادویات بیچنے پر 2 دکانداروں کے خلاف ایف آئی آرز درج کروائی گئی ہیں جبکہ ایک لاکھ 41 ہزار 500 روپیہ جرمانہ بھی کیا گیا۔ انہوں نے اجلاس کو وزیراعظم پاکستان کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے پیداواری مقابلہ جات اور 50 فیصد سبسڈی پر زرعی مشینری کی فراہمی کے بارے میں بھی کئے گئے اقدامات سے آگاہ کیا۔انہوں نے مذید بتایا کہ اب تک 55 ہزار 626 کسان رجسٹرڈ ہو چکے ہیں ۔ جن میں سے 15 ہزار 310 کسانوں نے کسان کارڈ کے لئے اپلائی کیا اور اب تک 3 ہزار 5سو 33 کسانوں کو کسان کارڈ کا اجراءہو چکا ہے ۔

اجلاس میں ڈپٹی ڈائریکٹر لائیو سٹاک پھالیہ ڈاکٹرمسعود نے حکومت کی جانب سے غریب خاندانوں میں پولٹری کے ایک یونٹ جس میں ایک مرغا اور 5 مرغیوں یا 12 مرغوں کی رعائتی نرخوں 1،140 روپے میں فراہمی ، کٹا بچاﺅ ، کٹا فربہ پروگرام اور جانوروں کی مختلف بیماریوں کے خلاف ویکسی نیشن کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ بھی دی۔ اجلاس میں شریک کسانوں اور کاشت کار نمائندوں نے حکومت کی جانب سے زراعت کی ترقی کیلئے اٹھائے گئے اقدامات بالخصوص کسان کارڈ کے اجراءکو سراہا۔

منڈی بہاوالدین میں گھریلو موغبانی کے خواہشمند خواتین و حضرات میں مرغیوں کے 200یونٹ تقسیم

جس پر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ زرعی شعبہ ہمارے ملک کیلئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے۔ کسان کی خوشحالی کا مطلب ملک کی مجموعی ترقی ہے اور کسان کی خوشحالی اور زرعی معیشت کی مضبوطی لازم وملزوم ہیں۔ کسان بورڈ کے نمائندوں کی جانب سے کسانوں کے مسائل اور ان کے حل کیلئے گزارشات بھی پیش کی گئیں جس پرایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نے متعلقہ محکموں کے افسران کو گزارشات حل کرنے کی ہدایت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں