وزیراعظم زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت منڈی بہاوالدین کے خوش نصیب کسانوں میں جدید زرعی مشینری کی چابیاں تقسیم

منڈی بہاﺅالدین( ایم.بی.ڈین نیوز 31 جولائی2021 ) صوبائی وزیر زراعت سید حسین جہانیاں گردیزی نے کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت زرعی شعبے کی ترقی اور فروغ کیلئے انقلابی اقدامات اور تبدیلیاں لائی جا رہی ہیں، پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار زرعی شعبے کو فوکس کیا گیا ہے ، موجودہ حکومت کا عزم ہے کہ کسان بھائیوں کی معاشی ترقی اور استحکام کیلئے زیادہ سے زیادہ ہر ممکن اقدامات ٹھائے جائیں، ممبر قومی اسمبلی حاجی امتیاز احمد چوہدری نے کہا وزیراعظم پاکستان نے کسانوں کی مشکلات کو کم کرنے اور ان کی فلاح و بہبود کیلئے جس سفر کا آغاز کیا ہے اس سے ہر کسان کے گھر میں خوشحالی آئے گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج یہاں تحصیل کونسل ہال میں وزیراعظم پاکستان عمران خان کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت خوش نصیب کسانوں اور کاشت کاروں میں کسان کارڈز اور دھان کی جدید زرعی مشینری کی چابیاں تقسیم کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل زراعت توسیع و ریسرچ پنجاب ڈاکٹر انجم علی بٹر، ڈائریکٹر زراعت (توسیع) گوجرانوالہ چوہدری جاوید اقبال ،اسسٹنٹ کمشنر منڈی بہاﺅالدین امتیاز علی بیگ، ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت (توسیع) شیخ محمد اقبال اور دیگر متعلقہ افسران کے علاوہ کسانوں اور کاشت کاروں کی بھاری تعداد نے شرکت کی۔

صوبائی وزیر سید حسین جہانیاں گردیزی نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ وزےراعظم پاکستان کے ویژن کے مطابق زرعی شعبے کی ترقی کےلئے بجٹ میں خطیر رقم مختص کی گئی ہے ۔ عصری تقاضوں کے پیش نظر حکومت زرعی شعبے کو جدید خطوط پر استوار کرنے کیلئے مشینی طریقہ کاشت کے فروغ کیلئے بہترین اقدامات اٹھا رہی ہے تا کہ چھوٹے کاشت کار ان ثمرات سے بہتر طور پر مستفید ہو سکیں کیونکہ کسان خوشحال ہو گا تو ملکی معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے کسان کارڈ کے اجراءسے کسانوں کو کھاد ، بیج اور زرعی ادویات پر براہ راست سبسڈی کی رقوم حاصل کرنے میں آسانی ہو گی اور کسان زرعی مداخل کے بہتر استعمال سے اپنی پیداوار بڑھا کر زیادہ منافع کما سکیں گے جس سے ان کا معیار زندگی بھی بلند ہو گا۔

سید حسین جہانیاں گردیزی نے کہا کہ کسان کارڈ کے ذریعے کاشتکاروں کو کھاد، بیج، زرعی آلات و ادویات، قدرتی آفات سمیت دیگر حکومتی منصوبوں میں براہ راست ان کے اکاوئنٹ میں کیش ٹرانسفر کر کے سبسڈی دی جائے گی۔ ممبر قومی اسمبلی حاجی امتیاز احمد چوہدری نے کہاکہ کسان ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے ۔ کسانوں کو جتنا زیادہ ریلیف حاصل ہو گا ملک اتنا زیادہ ترقی کرے گا۔انہوں نے کہا کہ ان سہولیات کا مقصد ملک ، صوبے سمیت کسانوں کو خود کفیل بنانا ہے۔وزیراعظم پاکستان کے ویژن اور وزیراعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر کاشتکاروں کو تمام سبسڈی کیش براہ راست پہنچانے کیلئے صوبے بھر میں کسان کارڈ کا اجراءکر دیا گیا ہے جو محکمہ زراعت توسیع کی توسط سے رجسٹرڈ کاشتکاروں کو مہیا کیا جا رہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ اور محکمہ زراعت (توسیع) کسانوں کی خدمت کےلئے ہر وقت کوشاں ہیں اور کاشت کار وں کوچاہیے کہ حکومت کی جانب سے دی جانے والی سہولتوں اور سبسڈی سے زےادہ سے زےادہ فائدہ اٹھائیں ۔ڈائریکٹر جنرل زراعت توسیع و ریسرچ پنجاب ڈاکٹر انجم علی بٹر نے کہا کہ ہماری معیشت کا 70 فیصد طبقہ زراعت سے وابستہ ہے لہذا زراعت کے شعبے میں جدید ٹیکنالوجی اپنا کر ہی ہم زرعی معیشت کو آگے لے جا سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت کاشتکاروں کی ضروریات کو مد نظر رکھتے ہوئے زرعی آلات و دیگر منصوبوں پر اربوں روپے خرچ کر رہی ہے ۔ ضلع میں محکمہ زراعت توسیع کی جانب سے 55 ہزار کسان کاشتکاروں کو رجسٹرڈ کیا گیا ہے اور کسانوں کی رجسٹریشن کا عمل جاری ہے، کسانوں کی رجسٹریشن نادارا، محکمہ لینڈ ریکارڈ اور محکمہ زراعت توسیع کی جانب سے میرٹ پر کی جا رہی ہے۔

انجم علی بٹر نے کہاکہ وزیراعظم پاکستان کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت کسانوں اور کاشت کاروں کو سبسڈی پر منظور شدہ اقسام کے بیج و زرعی آلات مشینری قرعہ اندازی کے ذریعے فراہم کی جا رہی ہے جس سے آنے والے دنوں میں ان کی فصلات میں اوسط پیداوار میں کئی گنا اضافہ ممکن ہو گا۔ قبل ازیں وزیراعظم پاکستان کے کلین اینڈ گرین پاکستان کے تحت تحصیل کونسل ہال کے لان میں پودا بھی لگایا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں