منڈی بہاؤالدین سے تعلق رکھنے والے سابقہ پارلیمنٹرین آئندہ ماہ کے آغاز میں پیپلزپارٹی میں شمولیت اختیار کریں گے، ذرائع

سابق صدر اور پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری نے آئندہ عام انتخابات میں پنجاب میں کامیابی کے لیے بساط بچھا دی ہے اور اب لاہور میں ڈیرے ڈال لئے ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ سابق صدر آصف زرداری آئندہ انتخابات میں پنجاب میں ن لیگ کا راستہ روکنے کے لیے مضبوط الائنس بنانے میں مصروف ہیں، اور پنجاب میں پیپلزپارٹی مضبوط آلائنس کے ساتھ ن لیگ کو عام انتخابات میں ٹف ٹائم دینے کے لیے پرعزم ہیں۔

منڈی بہاوالدین (‌ایم.بی.ڈین نیوز 28 جون 2021) آصف علی زرداری نے پنجاب میں پیپلز پارٹی کے کم بیک کے لیے اینٹی ن لیگ ووٹ کو یکجا کرنے کے مشن پر کام شروع کردیا ہے، اور سینٹرل پنجاب اور جنوبی پنجاب کے اہم سیاستدانوں سے رابطے کئے ہیں، جب کہ پیپلز پارٹی کو چھوڑ کرنے جانے والوں کے لیے بھی جماعت میں واپسی کے دروازے کھول دیئے گئے ہیں۔

ذرائع پیپلزپارٹی کا کہنا ہے کہ پنجاب کی اہم شخصیات پیپلز پارٹی میں شمولیت کے لیے آمادہ ہیں، اور پہلے مرحلے میں گوجرانولہ، جہلم، جھنگ، اٹک، سیالکوٹ، فیصل آباد اور منڈی بہاؤالدین سے تعلق رکھنے والے سابقہ پارلیمنٹرین آئندہ ماہ کے آغاز میں پیپلزپارٹی میں شمولیت اختیار کریں گے، جب کہ قصور، ساہیوال، ملتان، لیہ، میانوالی، خانیوال، راجن پور، صادق آباد، بہاولپور اور بہاولنگر سے بھی اہم شخصیات پیپلز پارٹی میں شامل ہوں گی۔

پیپلز پارٹی کے ایک اور رہنما نے بتایا کہ جب لاہور میں ان کی آمد ہوئی تو آصف علی زرداری کو ان کے قریبی ساتھیوں نے بتایا کہ منڈی بہاؤالدین سے ناراض پی ٹی آئی رہنماؤں ندیم افضل چن اور سابق وفاقی وزیر نذر گوندل اور مسلم لیگ (ن) کے سابق رہنما ذوالفقار کھوسہ ان سے ملاقات کے بعد پیپلز پارٹی میں شامل ہوجائیں گے تاہم ایسا نہیں ہوا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں