کیا اب ٹویٹر کے ذریعے بھی پیسہ کمایا جاسکے گا؟

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ٹویٹر نے امریکا میں صارفین کیلئے ایک نئے فیچر کے ٹیسٹ کا اعلان کیا ہے، جس سے مداح خصوصی مواد تک رسائی کیلئے ان صارفین کو قیمت ادا کریں گے۔

اے ایف پی کے مطابق ٹویٹر نے امریکا میں موجود صارفین سے درخواستیں حاصل کرنا شروع کردی ہیں جو نئے فیچرز ’ٹکٹڈ اسپیس اور سپر فالوز‘ سے پیسہ بنانا چاہتے ہیں۔ ٹویٹر کے نئے فیچرز کی ٹیم ممبران ایلن ہیولیسیک اور ایستھر کرافورڈ کا کہنا ہے کہ ٹکٹد اسپیس کی مدد سے آپ دلچسپ لائیو آڈیو اسٹریمنگ کی سروس مہیا کرسکتے ہیں، جس کیلئے صارفین قیمت ادا کریں گے جبکہ سپر فالوز کے ذریعے آپ موسٹ کنیکٹڈ فالورز کے ساتھ براہ راست رابطے میں رہ سکتے ہیں جس سے بھی آپ کو ریونیو ملے گا۔

ٹویٹر کے مطابق ’ٹکٹڈ اسپیس‘ کے ذریعے اسٹارز اپنے مواد کو ایک سے 999 ڈالرز تک میں فروخت کرسکیں گے جبکہ ’ٹوئٹر فالوز‘ کی ماہانہ سبسکرپشن 3، 5 یا 10 ڈالرز تک ہوگی۔ ٹویٹر حکام کا مزید کہنا ہے کہ ہم ٹویٹر کو صرف تفریح کا پلیٹ فارم نہیں بلکہ اسے پیسہ کمانے کی جگہ بنانا چاہتے ہیں۔

ٹویٹر ٹیم ممبرز نے کہا کہ ان فیچرز کے ذریعے پہلی مرتبہ 50 ہزار ڈالرز تک کمانے والے صارفین سے 3 فیصد رقم وصول کی جائے گی تاہم اس کے بعد ٹوئٹر کی فیس 20 فیصد ہوگی۔ ٹویٹر حکام کا کہنا ہے کہ ہم چاہتے ہیں کہ آغاز میں صارفین کی کم تعداد ان فیچرز کو ٹرائل کے طور پر حاصل کرے تاکہ اسے بڑے پیمانے پر متعارف کروانے سے پہلے ٹیسٹ کیا جاسکے.

اپنا تبصرہ بھیجیں