ڈینگی کا خاتمہ سماجی اور قومی مسئلہ ہے اور یہ جان لیوا بھی ہو سکتا ہے،محکمہ صحت کی ذمہ داری ہے کہ وہ ڈینگی کے خاتمہ کیلئے کوششیں کریں، ڈپٹی کمشنر

منڈی بہاﺅالدین( ایم.بی.ڈین نیوز 31مئی2021) ڈینگی کا خاتمہ سماجی اور قومی مسئلہ ہے اور یہ جان لیوا بھی ہو سکتا ہے، محکمہ صحت سمیت تمام متعلقہ محکموں کی ذمہ داری ہے کہ وہ ڈینگی کے خاتمہ کیلئے سنجیدہ کوششیں کریں، انہوں نے کہا کہ موسمی تبدیلی کے باوجود انسداد ڈینگی کی روک تھام اور سد باب کیلئے ڈینگی لاروا کی ممکنہ افزائش کی جگہوں کی تسلسل کے ساتھ ان ڈور اور آﺅٹ ڈور سرویلینس کی جائے تا کہ ضلع کو ڈینگی سے محفوظ رکھا جا سکے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج یہاں ڈی سی آفس میں ڈسٹرکٹ ایمرجنسی ریسپانس کمیٹی برائے انسداد ڈینگی کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ئے کیا۔ اجلاس میں سی ای او ہیلتھ (ڈی ایچ اے) ڈاکٹر محمد الیاس گوندل، ڈی ایچ اوز ڈاکٹر افتخار، ڈاکٹر شکیل اقبال بٹ، ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر عاطف علی وڑائچ، ڈسٹرکٹ پاپولیشن ویلفیئر آفیسر ابوالحسن مدنی، ڈی ڈی ایچ اوز ڈاکٹر خالد عباسی، ڈاکٹر رضوان تابش، میڈیکل سپرنٹنڈنٹس پھالیہ ڈاکٹر بشریٰ چوہدری، ملکوال ڈاکٹر ناصر وقار، فیلڈ انسپکٹر ماحولیات عاطف عمران کے علاوہ دیگر متعلقہ محکموں کے افسران بھی موجود تھے۔

قبل ازیں سی او ہیلتھ ڈاکٹر محمد الیاس گوندل نے اجلاس کو ان ڈور، آﺅٹ ڈور ڈینگی سرویلنس،ڈینگی سپرے ، انسداد ڈینگی سے متعلق ادویات کے سٹاک،ڈینگی لاروا سائیٹس کے معائنہ کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ اس ہفتے کی کاروائی کے مطابق ہاٹ سپاٹ جگہوں کی چیکنگ کے دوران لاروے پائے جانے پر فوری طور پر مکینیکل لاروا سائیڈنگ کر دی گئی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع بھر میں ابھی تک ڈینگی کا کوئی مریض رپورٹ نہیں ہوا۔ ڈاکٹر الیاس گوندل نے بتایا کہ 518ٹیموں نے ان ڈور77ہزار525گھروں کو چیک کیا گیا ہے جبکہ آﺅٹ ڈور9ہزار290گھروںکو چیک کیا۔اسی طرح ان ڈور سرویلینس کے تحت 3لاکھ22ہزار59کنٹینرز چیک کئے گئے جبکہ آﺅٹ ڈور سرویلینس کے تحت39ہزار674کنٹینرز چیک کئے گئے۔

انہوں نے بتایا کہ انسداد ڈینگی کے حوالے سے حفاظتی اقدامات نہ کرنے پر479نوٹسز جاری کئے گئے۔ بریفنگ سننے کے بعد ڈپٹی کمشنر طارق علی بسرا نے محکمہ صحت کے افسران کو واضح ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ وہ انسداد ڈینگی سے متعلق ان ڈور ،آوٹ ڈور سرویلنس کے کام میں مذید بہتری لائیں اور اس کے نتائج کی روشنی میںلاروا سائیڈنگ کاکام بھر پور طریقے سے مستقل بنیادوں پر جاری رکھیں تاکہ کسی بھی طرح ڈینگی کی افزائش ممکن نہ ہوسکے۔انہوں نے کہا کہ ڈینگی مچھر کے خاتمے کیلئے سرکاری محکموں کے ساتھ کمیوننٹی کو بھی اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔

کمیوننٹی کے عملی تعاون کے بغیر مچھروں کی افزائش گاہوں کا خاتمہ ممکن نہیں بالخصوص گلی محلوں ، گھروں میں مچھروں کی افزائش کو روکنے کیلئے کمیونٹی موبلائزیشنن کیلئے شعور اور آگاہی اجاگر کرنے کی ضرورت ہے اس سلسلہ میں محکمہ صحت کی سرویلنس ٹیمیں گھر گھر جاکر ڈینگی کے خاتمہ کیلئے شہریوں کو ترغیب دیں اور ماحول کو صاف رکھنے کے سلسلے میں معلومات فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ اپنی سماجی ذمہ داریوں کا احساس دلائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں