اوباش شخص نے ساتھی کے ہمراہ اسلحہ کے زور پر لڑکے کو اغوا ء کر کے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا، والدہ کی ڈی پی او انصاف کی اپیل

ملک وال(نامہ نگار)اوباش شخص نے ساتھی کے ہمراہ اسلحہ کے زور پر لڑکے کو اغوا ء کر کے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔تھانہ میانہ گوندل کی پولیس سیاسی اثر ورسوخ کی بناء پر ملزمان کی پشت پناہی کرتے ہوئے صلح کے لئے دباؤ ڈالنے لگی۔ متاثرہ لڑکے کی والدہ کی پریس کلب میں انصاف کے لئے دہائی۔

تفصیلات کے مطابق موضع پنڈی رانواں کی رہائشی خاتون زرینہ بی بی زوجہ محمد اکرم نے پریس کلب میں انصاف کے لئے دہائی دیتے ہوئے کہا کہ23 جولائی کو رات 8 بجے ملزم سکندر حیات نے ساتھی کے ہمراہ اسلحہ کے زور پر میرے بیٹے عثمان کو گلی سے اغواء کر کے امرود کے باغ میں لے جاکر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا جس کا مقدمہ تھانہ میانہ گوندل میں درج کرایا گیا مگر تفتیشی افسر ظفیر مقامی چیئرمین سے ساز باز کر کے ملزمان سے صلح کے لئے دباؤ ڈال رہا ہے اور ملزمان کو بے گناہ کرنا چاہتا ہے جبکہ وقوعہ کے گواہ محمد اقبال کو پولیس ہراساں کر رہی ہے۔

خاتون کی ڈی پی او منڈی بہاوالدین ناصر سیال اور آر پی او گوجرانوالا ریاض نذیر گاڑا سے انصاف فراہم کرنے کی اپیل۔تاہم تفتیشی افسر ظفیر نے موقف دیتے ہوئے کہا کہ ملزم عبوری ضمانت پر ہے متاثرہ لڑکے کے سیمپل بجھوا رکھے ہیں رپورٹ آنے پر ملزم گناہ گار ثابت ہوا تو گناہ گار کریں گے اور اگر بے گناہ ہوا تو بے گناہ لکھ دیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں