رمضان المبارک کے بعد مہنگائی میں کمی آنا شروع

رمضان المبارک ختم ہوتے ہی مہنگائی میں بھی کمی آنا شروع ہوگئی ہے۔گزشتہ ہفتےمہنگائی میں صفر اعشاریہ چاردو فیصد کمی آئی اورشرح نو اعشاریہ ایک سات فیصدپرآگئی۔ چوبیس اشیاء کی قیمتیں برقرار رہیں۔ انڈے،سرخ مرچ اورگندم کا آٹامنہگاجبکہ پیاز،ٹماٹر،پٹرول اور ایل پی جی سستی ہوئی۔

رمضان کے بعد مہنگائی میں کمی آنا شروع ہوگئی ہے۔ گزشتہ ہفتے مجموعی طور پر مہنگائی میں صفر اعشاریہ 42 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔ ادارہ شماریات نے مہنگائی سے متعلق ہفتہ وار اعدادوشمار جاری کردیے ہیں۔

گزشتہ ہفتے 15 اشیا مہنگی ہوئی جبکہ 12 کی قیمتوں میں کمی آئی۔24 اشیائے ضروریہ کی قیمتیں کسی ردو بدل کے بغیر برقرار رہیں۔ ایک ہفتے میں انڈے 15.52 فیصد، سرخ مارچ 10.44 فیصد،گندم کا آٹا 8.54 فیصد مہنگا ہوا۔ اس دوران پیاز 10 فیصد، ٹماٹر 7 فیصد سستے ہوئے۔ گزشتہ ہفتے پیٹرول 9 فیصد، ایل پی جی سلنڈر 2 فیصد آلو اور لہسن 3 فیصد، دال چنا 2 فیصد تک سستی ہوئی۔ دال مونگ، ماش، مسور اور چینی کی قیمتوں میں بھی معمولی کمی دیکھنے میں آئی ۔

گزشتہ سال کی نسبت ڈیزل 34 فیصد، پیٹرول 31 فیصد،ٹماٹر37 فیصد،پیاز 34 فیصد اور ایل پی جی 8 فیصد سستی ہوئی۔ گزشتہ سال کے مقابلے میں آلو تقریبا 100 فیصد مہنگے ہوگئے۔مئی 2019 کے مقابلے میں دال مونگ 80 فیصد،ماش 50 فیصد،دال مسور 33 فیصداور گھی 28 فیصد مہنگا ہوا

اپنا تبصرہ بھیجیں