پھالیہ انتظامیہ کی طرف سے عدم تعاون اور ناجائز جرمانے ۔پھالیہ کے مرغ فروش کا 30مئی سے ہڑتال کا اعلان

پھالیہ (نیوز ڈیسک )تحصیل پھالیہ کی انتظامیہ کا ناروا سلوک ۔پھالیہ کے مرغ فروشوں نے 30 مئی سے غیر معینہ مدت تک ہڑتال کا اعلان کردیا ۔

تفصیلات کے مطابق پھالیہ کے مرغ فروشوں کا اہم اجلاس منعقد ہوا ۔اجلاس کے بعد مرغی فروشوں کے نمائندگان میاں عمران ۔شیخ ظہیر ۔محمد نبیل ۔صابر حسین ۔محمد نعیم اور دیگر نے میڈیا کو بتایا کہ پھالیہ کی انتظامیہ نے مرغی فروشوں کے ساتھ ظلم کی انتہا کر دی ہے غریب مرغی فروشوں کے ناجائز چا لا ن کیے جاتے ہیں اور ہزاروں روپے کے جرمانے کیے جاتے ہیں.

یہ بھی پڑھیں: پولٹری ایسوسی ایشن منڈی بہاوالدین کا چکن سرکاری نرخوں پر فرخت نا کرنے کا فیصلہ، دکانداروں نے ہڑتال کر دی

دوسری جانب انتظامیہ نے 260 روپے فی کلو مرغی کا گوشت فروخت کرنے کا سرکاری ریٹ جاری کر رکھا ہے جبکہ مرغی فروشوں کو اس وقت 290 سے 296 روپے کلو کے حساب سے مال مل رہا ہے اور وہ 30 روپیہ یا اس سے زیادہ کم ریٹ پر کیسے مال بیچ سکتے ہیں اس وقت مرغی فروشوں کو ایک کلو گوشت پر 30 سے 35 روپے کا نقصان ہو رہا ہے.

اس سلسلہ میں متعدد بار انتظامیہ سے گزارش کی گئی مگر ہماری شنوائی نہ ہوئی لہذا فیصلہ کیا گیا ہے کے تیس مئی 2020 بروز ہفتہ سے پھالیہ میں مکمل ہڑتال ہوگی تمام مرغی فروشوں کی دکانیں بند ہوں گی اور مطالبات منظور ہونے تک ہڑتال کا سلسلہ جاری رہے گا۔

مرغی فروشوں نے وزیراعظم پاکستان عمران خان ۔وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار ۔چیف سیکرٹری پنجاب ۔کمشنر گوجرانوالہ ۔اور ڈپٹی کمشنر منڈی بہاوالدین سے انسانیت کے نام پر اپیل کی ہے کہ ان کی گذارشات پر غور کیا جائے اور انہیں قانون کے مطابق ریلیف فراہم کیا جائے بصورت دیگر حالات خراب ہونے کی تمام تر ذمہ داری پھالیہ کی انتظامیہ پر عائد ہوگی.

منڈی بہاوالدین میں آج چکن کے تازہ ترین ریٹ دیکھیں

پھالیہ انتظامیہ کی طرف سے عدم تعاون اور ناجائز جرمانے ۔پھالیہ کے مرغ فروش کا 30مئی سے ہڑتال کا اعلان” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں