گنے کے کاشت کاروں اور کسانوں کو ہر ممکن ریلیف فراہم کیا جائے گا۔ منڈی بہاﺅالدین میں 6، پھالیہ میں 14 اور ملکوال میں 10پرچیز سنٹرز قائم

منڈی بہاوالدین ( ایم۔بی۔ڈین نیوز 12 دسمبر2019 ) ڈپٹی کمشنر مہتاب وسیم اظہر نے کہا ہے کہ گنے کے کاشت کاروں اور کسانوں کو ہر ممکن ریلیف فراہم کیا جائے گا، ان کا استحصال کسی صورت نہیں ہونے دیا جائے گا، انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی حکومت نے کسان پیکج اور سہولیات کے ذریعے دیہی کمیونٹی کی خدمت کا آغاز کیا ہے جس سے ہر کسان محسوس کر رہا ہے کہ وہ تنہا نہیں ہے بلکہ حکومتی سطح پر اسے بھر پور ریلیف مہیا کیا جا رہا ہے۔

ان خیالات کااظہار انہوں نے آج یہاں ڈی سی آفس میں گنے کی کرشننگ کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں اسسٹنٹ کمشنر منڈی بہاﺅالدین ملک عباس ذوالقرنین، اسسٹنٹ کمشنر پھالیہ ساجد منیر کلیار، اسسٹنٹ کمشنر ملکوال سید اسد عباس شیرازی،ڈی او انڈسٹریز رانا گلفام حیدر، آر ٹی اے سیکرٹری ملک محمد طاہر، اسسٹنٹ ڈائریکٹر لیبر ثاقب حیات، شاہ تاج شوگر ملز کے نمائندوں سمیت کسانوں کے سر کردہ رہنماﺅں نے شرکت کی۔

ڈی او انڈسٹریز رانا گلفام حیدر اور آر ٹی اے سیکرٹری ملک محمد طاہر نے اجلاس کو تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ منڈی بہاﺅالدین میں 6، تحصیل پھالیہ میں 14 اور تحصیل ملکوال میں 10پرچیز سنٹرز قائم کر دئیے گئے ہیں جس پر ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ کاشت کاروں کو گنے کی مقرر کردہ قیمت پر ادائیگیوں کو یقینی بنایا جائے اور پر چیز سنٹرز پر گنے کے وزن اور کسانوں کو پکی رسید کے اجراءکا خاص خیال رکھا جائے۔

انہوں نے ڈی او انڈسٹریز اور سیکرٹری آر ٹی اے کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ ٹریفک کی آسان آمد و رفت کے پیش نظر شوگر ملز مالکان اور کاشت کار حضرات کو اس بات کا پابند کیا جائے کہ وہ ڈبل ٹرالی کی بجائے سنگل ٹرالی استعمال کریں ۔ غلط پارکنگ ، اوورلوڈنگ نہ کریں اور ٹرالیوں کی فرنٹ اوربیک سائیڈ پر ریفلیکٹرز لگائیں۔ انہوں نے ہدایت کی کہ ڈی ایس پی ٹریفک کے ساتھ مل کر کرشننگ سیزن کیلئے فوری طور پر ٹریفک پلان ترتیب دیا جائے اور کرشننگ سیزن کیلئے متعلقہ افسران اور اہلکاران کو فوری طور پر ڈیوٹیاں سونپی جائیں تا کہ موجودہ کرشننگ سیزن احسن طریقے سے پایہ تکمیل تک پہنچایا جا سکے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں