سستا رمضان بازار ناقص اشیاء کا بازار بن گیا، غیر معیاری سبزیوں اور پھلوں کی بہتات

Ramzan Bazaar malakwalملک وال (نامہ نگار) پنجاب حکومت کے حکم پر عوام کو ریلیف دینے کے لئے لگایا گیا رمضان بازار ناقص اشیاء کی منڈی بن گیا ہے۔گلی سڑی اشیاء کو سٹالز پر لگا کر عوام سے سنگین مزاق کیا جا رہا ہے۔ رمضان المبارک میں ہر گھر کی ضرورت لیموں سستا رمضان بازار میں دستیاب ہی نہیں۔ پنکھے گرمی کے مارے گاہکوں کو ہوا دینے کی بجائے چہیتے سٹالز مالکان کوگرمی سے بچانے میں مصروف ہیں۔ میڈیا سروے کے دوران شہری انتظامیہ پر پھٹ پڑے اور شکایات کے انبار لگا دئیے۔ ان کا کہنا تھا کہ سبزیاں ٹینڈے، پھول گوبھی، بھنڈی توری، آلو، پیاز اور پھلوں میں سیب، خربوزہ اور دیگر پھلوں کی انتہائی ناقص کوالٹی سٹالز پر رکھی گئی ہے۔رمضان بازار میں موجود چیزوں کا معیار اس قدر ناقص ہے کہ انہیں دوبارہ عام مارکیٹ سے جا کر خریداری کرنا پڑتی ہے جبکہ رمضان بازار میں موجود چیزیں وافر مقدار میں موجود بھی نہیں۔ ایک شہر ی نے بتایا کہ اسے آلو پانچ کلو دینے کی بجائے دو کلو جبکہ بیسن دو کلو دینے کی بجائے صرف ایک کلو دیا جا رہا ہے۔شہریوں کا مزید کہنا تھا کہ خادم اعلیٰ شہباز شریف عوام کو حقیقی معانوں میں ریلیف دلوانے میں ناکام ہو چکے ہیں اور ان کے تمام دعوے صرف بیانات تک محدود ہیں۔ شہریوں کی شکایات پر میڈیا ٹیم نے جب ٹی ایم او ملک وال فیاض وڑائچ سے رابطہ کیا تو انہوں نے موقع پر پہنچ کر ناقص اشیاء کو اسٹالز سے ہٹوا دیااور سٹالز مالکان کو ہدایت کی کہ آئندہ ایسی غیر معیاری اشیاء فروخت کرنے سے گریز کریں۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں