پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کی اپیل پر ڈاکٹر شاہد نذیر کے قاتلوں کی عدم گرفتاری کیخلاف ڈ اکٹرز کی ملک وال میں ہڑتال

protest strike peoples
ملک وال(نامہ نگار) پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کی اپیل پر ڈاکٹر شاہد نذیر کے قتل میں ملوث سہولت کاروں کی عدم گرفتاری کیخلاف ڈ اکٹرز کی ملک وال سمیت تحصیل بھر میں ہڑتال، سرکاری اور پرائیویٹ ہسپتال بند ہونے سے مریضوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ تفصیلات کیمطابق قریباٌ دو ماہ قبل منڈی بہاؤالدین کے پرائیویٹ ہسپتال میں ڈاکٹر شاہد نذیر کو مسلح افراد نے فائرنگ کر کے قتل کر دیا تھا ڈاکٹر شاہد نذیر کے قاتلوں اور ان کے سہولت کاروں کو بے نقاب کر کے گرفتار نہ کرنے اور پولیس رویہ کے خلاف پی ایم اے کی کال پر گزشتہ روز تحصیل بھر کے ڈاکٹرز نے ہڑتال کی جبکہ تحصیل بھر کے سرکاری و پرائیویٹ ہسپتال بند کر دیے گئے جس سے مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا بعد ازاں تحصیل بھر سے ڈاکٹرز پی ایم اے ملک وال کے رہنما ڈاکٹر محمد الیاس گوندل کی قیادت میں ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال میں لگائے گئے احتجاجی کیمپ میں شرکت کی۔ پی ایم اے کے رہنما ڈاکٹر محمد الیاس گوندل نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر شاہد نذیر کے قاتل گرفتار ہو چکے ہیں مگر اس قتل میں ملوث سہولت کاروں جن کے خلاف ٹھوس ثبوت ہونے کے باووجود سیاسی دباؤ کے پیش نظر پولیس ان کو گرفتار نہیں کر رہی جو کہ پولیس کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے اگر پولیس نے اس کیس میں ملوث تمام ملزمان اور ان کے سہولت کاروں کو گرفتار نہ کیا تو پنجاب بھر کے ڈاکٹر ز سٹرکوں پر آ کر احتجاج کریں گے ۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں