ڈی ایس پی رانا اسلام کی سنی علماء کونسل کو بریفنگ،سنی علماء کونسل کے عہدیداران اور ممبران کی کثیر تعداد میں شرکت

SUNNI ULMA COUNCIL MEETING
ملک وال(نامہ نگار) ڈی ایس پی رانا اسلام کی 44چک کے حوالے سے پھیلائی جانیو الی بے بنیاد کشیدگی کی اطلاعات کے حوالے سے سنی علماء کونسل کو بریفنگ تحصیل بھر سے سنی علماء کونسل کے عہدیداران اور ممبران کی کثیر تعداد میں شرکت ڈی ایس پی رانا اسلام نے بتایا شر پسند عناصر جو اپنے مذموم مقاصد کو حاصل کرنے کے لیے مذہبی منافرت پھیلا نا چاہتے تھے جس میں ناکام رہے 44چک میں گذشتہ کئی روز سے مسلمانوں اور عیسائیوں کے درمیان مذہبی کشیدگی کی بے بنیاد اطلاعیں سوشل میڈیا پر پھیلائی گئیں مگر ان تمام خبروں اور سوشل میڈیا پر پھیلائے گئے پراپیگنڈہ کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ڈی ایس پی رانا اسلام نے بتایا الیکٹرانک میڈیا اور پرنٹ میڈیا کے وفود کے علاوہ پاکستان کی تمام ایجنسیوں نے اپنی رپورٹس اعلیٰ حکام کو ارصال کیں اور عیسائی برادری کا اعلیٰ وفد میڈیم گل ایم پی اے کی سربراہی میں لاہور 44چک آیا جنہوں نے وہاں کے 26گھرانوں میں جا کر فرداً فرداً لوگوں سے پوچھا تو عیسائی برادری اور مسلمان رہنماؤں نے بتایا کہ ہمارے درمیان کوئی مذہبی اختلاف نہیں ہم باہمی بھائی چارہ کے ساتھ رہ رہے ہیں جو اشرف نامی شر پسند یہ واویلا سوشل میڈیا پر پھیلا کر اپنی ذاتی مفادات کی خاطر مذہبی اختلافات بنانا چاہتا تھا وہ اپنے ناپاک مقاصد میں ناکام رہا سنی علماء کونسل کے راہنما اشرف چشتی اور آصف جاوید نے کہا کہ اسلام امن پسندی اور اقلیتوں کی حفاظت دیتا ہے ہمارے ملک پاکستان میں بسنے والے تمام مذاہب کے لوگ ہمارے لیے محب وطن پاکستانی ہیں انہوں نے تحصیل اور ضلع بھر کے سنی علماء کونسل کے عہدیداران اور ممبران کو کہا کہ آ ج جمعہ کے روز مسجدوں میں خصوصی طور پر اس غلط اور بے بنیاد پھیلائے جانے والے پراپیگنڈے کو ختم کرنے کے لیے تقاریر کی جائیں اور لوگوں کو بتایا جائے گا کہ کسی بھی شر پسند کی کوئی منافقانہ چال کامیاب نہیں ہونی دی جائے گی اور پاکستان میں بسنے والے تمام مسلمان بھائی اپنی اقلیتی برادری کی حفاظت کریں گے ۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں