ایف بی آر کی کاروائی: چائے کی فیکٹری قمر ٹی کو ٹیکس نادہندگی کی بناء پر سیل کر دیا

FBR
ملک وال(تحصیل رپورٹر) ایف بی آر حکام کی ملک وال میں کاروائی معروف چائے کی فیکٹری قمر ٹی کو ٹیکس نادہندگی کی بناء پر سیل کر دیا ،قمر ٹی کمپنی سیلز ٹیکس میں کروڑوں روپے کی ڈیفالٹر ہے کئی بار ریکوری کے نوٹس جاری کیے گئے عدم ادائیگی پر فیکٹری کو سیل کیا ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف بی آر سجاد اظہر نے صحافیوں کو تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ قمر ٹی کمپنی پر 5کروڑ روپے سیلز ٹیکس واجب الادا تھا مگر فیکٹر ی کے مالک نے ٹیکس جمع کروانے کی بجائے عدالت عظمٰی میں کیس دائر کیا ہوا تھا جس وجہ سے محکمہ سیلز ٹیکس کوئی کاروائی نہیں کر سکا مگر جب عدالت سے فیصلہ محکمہ کے حق میں آیا تو قمر ٹی کمپنی کو واجب الادا ٹیکس جمع کروانے کے لیے کئی بار نوٹس جاری کرنے کے باوجود ٹیکس کی رقم جمع نہیں کروائی گئی اور اعلیٰ افسران کی ہدایت پر قمر ٹی کمپنی کو سیل کر دیا جب تک ٹیکس کے بقایا جات جمع نہیں کروائے جاتے تب تک فیکٹری سیل رہے گی اس سلسلہ میں ڈی پی او منڈی بہاوالدین کو بھی اطلاع دے دی گئی اگر ٹیکس جمع کروانے سے پہلے فیکٹری میں کام کیا گیا یا قانون کی خلاف ورزی کرتے ہوئے سیل کو توڑا گیا تو ضابطہ اخلاق کے مطابق فیکٹر ی مالک کے خلاف مقدمات کا اجرا ء کیا جائے گا سیلز ٹیکس کے علاوہ قمر ٹی کمپنی پر غیر ملکی چائے کی پتی سمگلنگ کرنے کے مقدمات بھی درج ہیں اسی سلسلہ میں کچھ عرصہ پہلے کسٹم انٹیلی جنس حکام نے ملک وال میں کاروائی کرتے ہوئے غیر ملکی سمگل شدہ چائے کی 437بوریاں بھی تحویل میں لی تھیں اور قمر ٹی کمپنی کو امپورٹ کے ثبوت پیش کرنے کے لیے مہلت بھی دی گئی مگر مہلت ختم ہونے تک امپورٹ کے ثبوت پیش نہ کیے گئے جس پر کسٹم کلیکٹرنے تحویل میں لی گئیں سمگل شدہ غیر ملکی 437چائے کی بوریاں ضبط کرنے کا فیصلہ سنا دیا اور چند دن قبل بھی کسٹم انٹیلی جنس نے گورنمنٹ رفیع الاسلام سکول کے سامنے موجود گودام مقمر ٹی کمپنی پر غیر ملکی چائے کی پتی سمگلنگ کرنے کے مقدمات بھی درج ہیں اسی سلسلہ میں کچھ عرصہ پہلے کسٹم انٹیلی جنس حکام نے ملک وال میں کاروائی کرتے ہوئے غیر ملکی سمگل شدہ چائے کی 437بوریاں بھی تحویل میں لی تھیں اور قمر ٹی کمپنی کو امپورٹ کے ثبوت پیش کرنے کے لیے مہلت بھی دی گئی مگر مہلت ختم ہونے تک امپورٹ کے ثبوت پیش نہ کیے گئے جس پر کسٹم کلیکٹرنے تحویل میں لی گئیں سمگل شدہ غیر ملکی 437چائے کی بوریاں ضبط کرنے کا فیصلہ سنا دیا اور چند دن قبل بھی کسٹم انٹیلی جنس نے گورنمنٹ رفیع الاسلام سکول کے سامنے موجود گودام میں سمگلنگ شدہ چائے کی 83بوریاں دوبارہ تحویل میں لے لیں جس کے امپورٹ کے کاغذات پیش کرنے کی مہلت بھی ختم ہو گئی، ایف بی آر ترجمان نے بتایا کہ قمر ٹی کمپنی سمگلنگ کے ساتھ ساتھ اپنے ملازمین و دیگر عزیز و اقار ب کے نام پر بنک اکاؤنٹس کھلوا کر کروڑوں روپے کی ٹیں سمگلنگ شدہ چائے کی 83بوریاں دوبارہ تحویل میں لے لیں جس کے امپورٹ کے کاغذات پیش کرنے کی مہلت بھی ختم ہو گئی، ایف بی آر ترجمان نے بتایا کہ قمر ٹی کمپنی سمگلنگ کے ساتھ ساتھ اپنے ملازمین و دیگر عزیز و اقار ب کے نام پر بنک اکاؤنٹس کھلوا کر کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشن کرتا تھا جس میں صرف ایک اکاونٹ پر ٹرانزیکشن کی مد میں 14کروڑ 69لاکھ روپے ٹیکس بن گیا اور دیگر اکاونٹس کو بھی چیک کیا جا رہا ہے ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف بی آر سجاد اظہر کا کہنا تھا کہ قمر ٹی کمپنی کے خلاف کسٹم انٹیلی جنس، ایف بی آر، سیلز ٹیکس اور انکم ٹیکس سمیت دیگر محکمہ جات متحرک ہو چکے ہیں اور اب ہر مہینے سرکاری خزانہ کو ٹیکہ نہیں لگانے دیا جائے گا بلکہ حکومت پاکستان کا بقایا شدہ کروڑوں روپے کے ٹیکس کی ریکوری 100فیصد مکمل کی جائے گی۔۔۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں