ریلوے کالونیاں ملکوال گندگی کے ڈھیروں سے سج گئیں۔صفائی کا ٹھیکہ گذشتہ 3سال سے نہ ہو سکا

RAILWAY GUARD COLONY Malakwal
محکمہ ریلوے ملک وال کی تین رہائشی کالونیوں کا صفائی کا ٹھیکہ گذشتہ 3سال سے نہ ہو سکا ، ریلوے کالونیاں گندگی کے ڈھیروں سے سج گئیں بیشتر ریلوے کی خالی اراضی گندا پانی کھڑے ہونے کے باعث تالابوں کی شکل اختیار کر گئیں صفائی کا نظام بحال کیا جائے ریلوے ملازمین اور شہریوں کا مطالبہ ، 3سنٹری ورکر ہمارے پاس ہیں جو صرف ریلوے ہسپتال اور ریلوے روڈ کی صفائی کرتے ہیں اور 3سال سے صفائی کا ٹھیکہ ریلوے نے نہیں دیا جس کے باعث صفائی نہیں کی جاتی ریلوے میڈیکل آفیسر و سنٹری انچارج ڈاکٹر عرفان کی صحافیوں سے گفتگو۔
ملک وال(نامہ نگار) ملک وال شہر میں 3ریلوے کالونیاں ہیں اور دیگر خالی اراضی جو کئی سالوں سے صفائی نہ ہونے کی وجہ سے تباہ و برباد ہو گئی ریلوے گارڈ کالونی شہر کے مرکز میں واقع ہونے کے باعث دونوں اطراف سے ہزاروں پر محیط آبادی کا جینا دو بھر ہو گیا تین سالوں سے لگے گندگی کے ڈھیروں اور گندے پانی کے جوہڑوں کی وجہ سے شہر بھر میں بدبو اور مچھروں میں خطرناک حد تک اضافہ ہو گیا جس وجہ سے کئی وبائی امراض پھیلنے کے خدشات بڑھ گئے ریلوے کالونیوں میں لگے گندگی کے ڈھیروں اور سیوریج نہ ہونے کے باعث کروڑوں روپے کی لاگت سے بنائی گئی رہائشیں بھی نا قابل استعمال ہو گئی ہیں جن میں رہنے والے ملازمین کے ساتھ ساتھ گردونواح میں بسنے والے مکینوں کا بھی جینا دو بھر ہو گیا رابطہ کرنے پر سنٹری انچار ج و میڈیکل آفیسر ریلوے ہسپتال ڈاکٹر عرفان نے کہا کہ پہلے ملک وال میں ریلوے کالونیوں اور ریلوے اراضی میں نالوں کی صفائی کا سالانہ ٹھیکہ دیا جاتا ہے جو گذشتہ 3سال سے بند کر دیا گیا جس وجہ سے گندگی کے انبار لگ گئے ہیں سنٹری انسپکٹر ٹی ایم اے ملک وال نے کہا کہ ریلوے کالونیوں کی صفائی کی ذ مہ داری ٹی ایم اے کی نہیں بلکہ محکمہ ریلوے کی ہے عوامی حلقوں نے ریلوے حکام سے ملک وال میں ریلوے سنٹری کا ٹھیکہ فی الفور بحال کرنے کا مطالبہ کیا۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں