خضر: ماموں اور سوتیلے بھائی نے 20سالہ یتیم لڑکی کو سات لاکھ روپے کے عوض بیچ دیا

Malakwal news
ماموں اور سوتیلے بھائی نے 20سالہ یتیم لڑکی کو سات لاکھ روپے کے عوض بیچ دیا ، لڑکی کی 15مئی کو شادی طے تھی جو لڑکی کی پسند سے کی جا رہی تھی ، پولیس بااثر سیاسی شخصیت کے دباؤ پر کاروائی سے گریز کر رہی ہے، بیٹی کو بازیاب کروایا جائے ورنہ خود سوزی کر لوں گی غریب بیوہ کی دہائی۔ ۔۔۔
ملک وال (نامہ نگار) ملکوال کے موضع خضر کی رہائشی بیوہ رحمت بی بی نے میڈیا کو بتایا کہ 28 اپریل کی صبح میری بھتیجی مہر بی بی ہمارے گھر آئی اور میری بیٹی ثمرین کو بہانے سے بلا کر گھر سے باہر سڑک پر لے گئی جہاں پر قیصر ، عنائت ،ظفر اقبال ، سمیت 8 ملزمان ہائی لکس سمیت موجود تھے جنہوں نے اسلحہ کے زور پر زبردستی میری بیٹی کو اغوا کر کے عباس نامی شخص کے ہاتھوں 7 لاکھ روپے کے عوض فروخت کر دیا ہے جبکہ ثمرین کی پسند سے شادی 15 مئی کو طے کر رکھی تھی بیوہ رحمت بی بی نے کہا کہ اگر میری بیٹی کوبازیاب نہ کرایا گیا تو میں خود سوزی کر کے زندگی کا خاتمہ کر لوں گی اس موقع پر شہباز احمداور دیگر نے کہا ملزمان دھمکیاں دے رہے ہیں ہم تمہاری دوسری بیٹی کو بھی اٹھا کر لے جائیں گے انہوں الزام لگاتے ہوئے کہا کہ مقامی سیاستدان نجم شاہ کی ایماء پر پولیس ملزمان کو تحفظ دے رہی ہے لواحقین نے پولیس کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے وزیر اعلی پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ ہماری بیٹی کو بازیاب کروا کر ہمیں انصاف دیں تفتیشی افسر اقبال دھیلا نے بتایا کہ ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے مار رہے ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں