بھٹہ پر کام کرنے والے 387بچوں کو سکول داخل کروادیا گیا،مفت کتابیں، بسے، جوتے اور وردیاں فراہم کر دی گئیں

bhatta survey
ملک وال(نامہ نگار)تحصیل بھر میں بھٹہ خشت پر کام کرنے والے مزدوروں کے 387بچوں کو سکول داخل کروادیا گیا ، بچوں کو مفت کتابیں، بسے، جوتے اور وردیاں فراہم کر دی گئیں اسسٹنٹ کمشنر پنجاب حکومت کی ہدایت کے مطابق چائلڈ لیبر ایکٹ 2016aپر عملد رآمد اور بھٹہ خشت پر بچوں کی مشقت کے خاتمہ کے لیے تحصیل بھر کے بھٹہ خشت کا معائنہ کیا گیا اور ایک سروے کے مطابق یہ بات سامنے آئی کہ تحصیل بھر کے بھٹہ خشت پر 387بچے جو اپنے والدین کے ساتھ رہ رہے ہیں اس مہم کے بعد بھٹہ خشت پر کام کرنے والے افراد کے بچوں کو سکولوں میں بھیج دیا گیا ڈپٹی ایجوکیشن افسر (مردانہ) پروفیسر امانت علی اور ڈپٹی ایجوکیشن افسر (زنانہ) شگفتہ ناہید کے راہنمائی اور شبانہ روز کاوشوں کی وجہ سے بھٹہ خشت پر کام کرنے والے مزدوروں کے 4سے 14سال تک کے تمام بچوں کو سکولوں میں داخل کروا دیا اور موقع پر سینکڑوں مسافروں کو زائد وصول شدہ کرایہ بھی واپس کروایا گیا پرائس کنٹرول ٹیموں کی شاندار کارکردگی قابل تحسین ہے اور آئندہ بھی اسی عزم کے ساتھ گرانفروشوں کے ساتھ ساتھ دیگر ایسے افراد جو سرکاری نرخوں کرایہ ناموں سے تجاوز کریں گے ان کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کرتے رہیں گے ۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں