محکمہ پولیس میں نفری کم ہونے کے باعث جرائم کی شرح میں اضافہ،450سے زائد خالی سیٹوں پر بھرتی نہ ہو سکی

police security
ملک وال (نامہ نگار) محکمہ پولیس میں نفری کم ہونے کے باعث جرائم کی شرح میں اضافہ پولیس کا رکردگی بری طرح متاثر، 450سے زائد خالی سیٹوں پر 2010کے بعد بھرتی نہ ہو سکی آسامیوں کے انخلاء کی وجہ سے ملازمین ڈبل ڈیوٹیاں کرنے پر مجبور، تحریر ی رپورٹ ریجنل پولیس افسر کو ارصال کر دی گئی ،ذرائع کے مطابق گذشتہ 7سالوں میں ضلع منڈی بہاوالدین میں ایک جوان بھی محکمہ پولیس میں بھرتی نہیں کیا گیا اس لمبے عرصہ میں محکمہ پولیس سے فراغت حاصل کرنے والے جوانوں کی وجہ سے نفری میں خاطر خواہ اضافہ ہو تا چلا گیا جس کا نتیجہ ضلع بھر میں جرائم کی شرح فیصد خطر ناک حد سے تجاوز کر گئی ذرائع نے بتایا ڈی پی او دفتر سے نفری کی کمی اور خالی آسامیوں کے بارے میں تفصیلات سے کئی بار ریجنل پولیس افسر کوتحریر ی طور پر آگاہ کیا گیا مگر تا حال بھرتی کے متعلق کوئی لائحہ عمل سامنے نہیں آیا ملازمین نفری کی کمی کا خمیازہ ڈبل ڈیوٹیاں کر کے ادا کرنے پر مجبور ہیں جبکہ حکومتی نمائندوں کا کردار بھی اس حوالے سے صفر ہے واضح رہے اگر یہ بھرتیاں کر دی جاتی ہیں تو ضلع بھر کے 400سے500خاندانوں کو معاشی فائدہ بھی ہو گا اور پولیس کی کارکردگی میں بھی نمایاں طور پر فرق نظر آئے گا۔۔۔

محکمہ پولیس میں نفری کم ہونے کے باعث جرائم کی شرح میں اضافہ،450سے زائد خالی سیٹوں پر بھرتی نہ ہو سکی” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں