گورنمنٹ ٹیکنیکل ٹریننگ سنٹر کو اپ گریڈ کر کے رورل ہیلتھ سنٹر کی عمارت میں منتقل کیا جائے

GTTC malakwal news
گورنمنٹ ٹیکنیکل ٹریننگ سنٹر ملک وال کو اپ گریڈ کر کے رورل ہیلتھ سنٹر کی خالی ہونے والی عمارت میں منتقل کیا جائے عوامی حلقوں کا مطالبہ ، موجودہ کرائے کی عمارت ناکافی ہونے کی وجہ سے کئی کلاسز کا اجرا بھی نہیں ہو رہا، ادارہ کو آر ایچ سی کی عمارت میں منتقل کرنے کیلئے ڈی سی او منڈی بہاؤالدین کو دو مرتبہ چٹھی لکھی ہے غلام شبیر سنگم انچارج سنٹر۔


ملک وال(نامہ نگار) گورنمنٹ ٹیکنیکل ٹریننگ سنٹر ملک وال کے انچارج غلام شبیر سنگم نے بتایا کہ نوجوانوں کو فنی تعلیم دینے کیلئے پنجاب حکومت نے ٹریننگ سنٹر کرائے کی عمارت میں قائم کر رکھا ہے لیکن عمارت ناکافی ہونے کی وجہ سے جہاں طلبا کو بہتر تعلیمی سہوتیں میسر نہیں وہاں کئی کلاسز کا اجرا بھی ممکن نہیں ہے انہوں نے بتایا کہ رورل ہیلتھ سنٹر کی عمارت خالی ہو چکی ہے اس لئے اگر اسے وہاں منتقل کر دیا جائے تو اس کو اپ گریڈ کر کے گورنمنٹ ٹیکنیکل انسٹیٹیوٹ کا درجہ دیا سکتا ہے کیونکہ حکومت کی پالیسی ہے کہ ہر تحصیل ہیڈ کوارٹر شہر میں ٹیکنیکل انسٹیٹیوٹ قائم کیا جائے لیکن مناسب عمارت نہ ملنے کی وجہ سے اسے اپ گریڈ نہیں کیا جا رہا ۔ غلام شبیر سنگم نے بتایا کہ ادارہ کی انتظامیہ نے اسے آر ایچ سی کی خالی ہونے والی عمارت میں منتقل کرنے کیلئے ڈی سی او منڈی بہاؤالدین کو 2دسمبر 2015 اور 5مارچ 2016کو دو مرتبہ چٹھیاں بھی لکھی ہیں انہوں نے کہا کہ فنی تعلیم سے معاشرے کے غریب نوجوان نہ صرف باعزت روزگار حاصل کرتے ہیں بلکہ ملک کیلئے زرمبادلہ بھی کماتے ہیں ۔ انجمن تحفظ حقوق شہریاں ، المصطفیٰ ویلفیئر سوسائٹی ، سٹیزن فورم اور دیگر سماجی تنظیموں کے رہنماؤں نے ڈی سی او منڈی بہاؤالدین سے مطالبہ کیا ہے کہ گورنمنٹ ٹیکنیکل ٹریننگ سنٹر کواپ گریڈ کر کے آر ایچ سی کی خالی ہونے والی عمارت میں منتقل کیا جائے تاکہ تحصیل بھر کے ہزاروں نوجوان فنی تعلیم حاصل کر کے معاشرے کے مفید شہری بن سکیں ۔ ذرائع کیمطابق ڈی سی او نے اس سلسلہ میں اسسٹنٹ کمشنر ملک وال سے رپورٹ طلب کر رکھی ہے ۔۔۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں