ملکوال شہر میں واپڈا کی بے ہنگم تاریں کئی گھروں کے چراغ گل کر چکی ہیں

Malakwal news
ملکوال(تحصیل رپورٹر) ملکوال شہر میں واپڈا کی بے ہنگم تاریں کئی گھروں کے چراغ گل کر چکی ہیں محلہ فضل آباد، شیرانوالہ، محلہ صابری ،گلی تیلیانوالی، دربارشریف والی اور بیشتر آبادی میں سینکڑوں گھروں کے اوپر سے بجلی کی مین تاریں انتہائی قریب سے گزر رہی ہیں جن کیوجہ سے لوگ اپنے مکانوں پر مزید تعمیرات کرنے سے قاصر ہیں، اتنا ہی نہیں کئی غریب لوگوں کے گھر ایسے بھی ہیں جن کے صحن میں بجلی کے کھمبے نصب ہیں ، کروڑوں کی پراپرٹی ان تاروں کیوجہ سے ناکارہ ہوئی پڑی ہیں ان تاروں کیوجہ سے کئی قیمتی جانوں کا ضیاع ہو چکا ہے بارہا دفعہ احتجاج کرنے کے باوجود بھی ملکوال کے اس دیرینہ اورجان لیوا مسئلے کو کبھی اہمیت نہیں دی گئی ایس ڈی او واپڈا سے اس متعلق پوچھا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ واپڈا کی جتنی بھی تاریں یا بجلی کے کھمبے لگے ہوئے ہیں اگر ان کو ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کرنا ہو تو اس کا ڈیمانڈ نوٹس جاری ہوتا ہے جو جمع ہونے کے بعد سائیڈشفٹ کی جاتی ہے اس بات پر المیہ ہے ان غریب لوگوں کے لیے جن کے بچے ان تاروں کی نظر ہو چکے ہیں وہ اپنے سر پر منڈلاتی موت کو ہٹانے کے لیے اتنی کثیر رقم کہاں سے لائے عوام الناس کا مطالبہ ہے کہ اس گھمبیر اور دیرینہ مسئلے کے حل کے لیے اعلٰی حکام کو فوری طور پرنوٹس لینا چاہیے اور مستقبل میں ایسی کئی قیمتی جانوں کو محفوظ کیا جائے جیسا کہ ماضی میں جانی نقصانات ہو چکے ہیں۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں