لائن لاسز اور بجلی پوری کرنے کیلئے گیپکو انتظامیہ ملک وال کی غیر اعلانیہ طویل لوڈ شیڈنگ

Loadsheding bulb light
لائن لاسز اور بجلی چوری پوری کرنے کیلئے گیپکو انتظامیہ ملک وال کی غیر اعلانیہ طویل لوڈ شیڈنگ ، بجلی چار چار گھنٹے مسلسل بند رکھی جاتی ہے نہم جماعت کے بورڈ امتحان دینے والے طلبا و طالبات اور شہری پریشان ، انجمن تاجران اور حکومتی جماعت کے رہنما خاموش تماشائی بن گئے ،کچھ مجبوریاں ہیں جلد صورتحال ٹھیک ہو جائے گی، گیپکو انتظامیہ۔
ملک وال(نامہ نگار) گیپکو انتظانتظامیہ کی طرف سے ہر مہینہ کے آخری دس روز بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ میں ازخود اضافہ کر دیا جاتا ہے جہاں شیڈول کی ایک گھنٹہ لوڈ شیڈنگ ہوتی وہاں دو گھنٹے جبکہ جہاں دو گھنٹے ہوتی وہاں چار گھنٹے مسلسل بند رکھی جاتی ہے ۔ مہینہ کے آخری دس دنوں میں بالخصوص رات 8بجے سے رات 12بجے تک مسلسل بجلی بند کر دی جاتی ہے جبکہ ان دنوں جماعت نہم کے بورڈ کے امتحانات ہو رہے ہیں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے ہزاروں طلبا و طالبات پیپرز کی ٹھیک طرح تیاری بھی نہیں کر پاتے جبکہ بجلی کی اس غیر اعلانیہ گنٹوں طویل بندش سے شہریوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا ہے بجلی کی بندش کا چور اور ڈکیت خوب فائدہ اٹھاتے ہیں ۔ یاد رہے کہ ملک میں رات 8بجے صرف ایک گھنٹہ بجلی بند کی جاتی ہے مگر ملک وال کے فٰدرز میں دو سے چار گھنٹے بجلی بند کی جاتی ہے ۔ اس صورتحال پر مرکزی انجمن تاجران اور حکومتی جماعت کے رہنماؤں نے بھی چپ سادھ رکھی ہے حالانکہ وزیر اعظم کے مشیر برائے پانی و بجلی افضال گوندل کا تعلق ملک وال کے گاؤں کھائی سے ہے ۔ انجمن تحفظ حقوق شہریا اور دیگر سماجی تنظیموں نے مشیر پانی و بجلی افضال گوندل سے مطالبہ کیا ہے کہ لائن لاسز اور چوری پوری کرنے کیلئے کی جانے والی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کو ختم کیا جائے جبکہ ذمہ دار اہلکاروں کیخلاف کاروائی کی جائے۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں