پولیس ملازم عدنان چیمہ پر خاتون سے دست درازی کرنے کے جرم میں تھانہ میانہ گوندل میں مقدمہ درج

F.I.R

ملک وال (نامہ نگار) پولیس ملازم عدنان چیمہ پر خاتون سے دست درازی کرنے کے جرم میں تھانہ میانہ گوندل میں مقدمہ درج ،ملزم نے گھر میں گھس کر میری عزت لوٹنے کی کوشش کی مدعیہ مقدمہ طیبہ بی بی، عدنان نواز چیمہ بیلٹ نمبر1102پولیس کانسٹیبل اور سیشن ہاؤس منڈی بہاوالدین میں بطور گارڈ تعینات تھامدعیہ مقدمہ طیبہ زوجہ شہباز نے موقف اپنایا کہ مورخہ 12مارچ کو دن 10بجے 45چک اپنے گھر میں موجود تھی میرا خاوند کھیتوں میں کام کرنے کی غرض سے گھر سے باہر تھا اور ملزم عدنان ولد نواز چیمہ نے مجھے گھر میں اکیلی پا کر کمرہ کے اندر گھس آیا اور آتے ہی میرا بازو پکڑ لیا اور چارپائی پر لیٹا کر مجھ سے زبردستی کرنے اور میرے کپڑے اتارنے اور میری عزت لوٹنے کی کوشش کرنے لگا میں نے بڑی مشکل سے ملزم کو دھکہ دے کر کمرہ سے باہر کی جانب بھاگ کرچیخ و پکار شروع کر دی اسی دوران میرا خاوند شہباز اور میرا نندوئی عامر شہزاد گھر پہنچ گئے جنہیں دیکھ کر ملزم عدنان نواز چیمہ گھر سے بھاگ گیا اور جاتے ہوئے ہمیں مقدمہ بازی کی شکل میں جان سے مارنے کی دھمکیاں دیتے ہوئے بھاگ گیا طیبہ کہنا ہے کہ پولیس ملازم ہونے اور زمیندار ہونے کی وجہ سے عدنان نواز نے میری عزت لوٹنے کی کوشش کر کے مجھ سے انتہائی سخت زیادتی کی اور محکمہ پولیس نے اپنے پیٹی بھائی کو بچانے کے لیے معمولی سی قابل ضمانت دفعہ لگائی جس پر وہ بڑی آسانی سے عدالت سے ضمانت پر رہا ہو کر واپس اپنے گاؤں آ گیا ہے اور ہمیں صلح پر آمادہ کرنے کے لیے دھمکیاں دے رہا ہے مدعیہ مقدمہ طیبہ نے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف سے اپیل کی ہے کہ ملزم عدنان نواز چیمہ کو فی الفور نوکری سے فارغ کر کے اس کے خلاف سخت سے سخت قانونی کاروائی کر کے نشان عبرت بنایا جائے تاکہ دوبارہ کسی پولیس ملازم کی جرات نہ ہو وہ عوام کے تحفظ کرنے کی بجائے میرے جیسی غریب عورتوں کی عزتیں نہ لوٹ سکیں، پولیس تھانہ میانہ گوندل کے محرر الیاس نے میڈیاسے بات کرتے ہوئے بتایا کہ مدعیہ کی درخواست پر ملزم کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا اور تفتیش جاری ہے جبکہ ملزم عدالت عظمیٰ سے ضمانت لے کر رہا ہو گیا۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں