جنرل مشرف کو بیرون ملک بھجوا کر میاں برادران نے ثابت کر دیا کہ ڈکٹیٹرز کے سامنے ڈٹے رہنا ان کے بس کی بات نہیں

Nadeem Afzal Chan MNA PPP Mbdin News
ملک وال(نامہ نگار) مائیک توڑنے کی اداکاری کرنے سے کوئی ذوالفقار علی بھٹو نہیں بنتا ، سابق ڈکٹیٹر جنرل مشرف کو بیرون ملک بھجوا کر میاں برادران نے ثابت کر دیا کہ ڈکٹیٹرز کے سامنے ڈٹے رہنا ان کے بس کی بات نہیں ، ان خیالات کا اظہار پیپلز پارٹی کے رہنما اور پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو کے پولیٹیکل ایڈوائزر ندیم افضل چن نے گزشتہ مقامی صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ ندیم افضل چن نے کہا کہ جب قوم نے ان دونوں بھائیوں سے کھڑے رہنے کی امید کی تو یہ بھاگ گئے یا جھاگ کی طرح بیٹھ گئے۔انہوں نے کہا کہ بھٹو کوئی مائیک توڑنے سے نہیں بن جاتا بلکہ بھٹو بننے کیلئے اپنے کئے ہوئے فیصلوں پر قائم رہنا پڑتا ہے اپنی زبان سے نکلے ہوئے لفظوں کا مان رکھنا پڑتا ہے چاہے اس کیلئے اپنی جان ہی کیوں نہ دینی پڑ جائے ۔ سابق چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی ندیم افضل چن نے کہا کہ جنرل مشرف کو آرٹیکل 6کے تحت سزا دلوانے کی باتیں کرنے والے میاں برادران آج کس منہ سے عوام کا سامنا کریں گے انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے خاتمے کی باتیں کرنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں جنرل مشرف کے دور میں ن لیگ کو بھی امیدوار ہی نہیں ملتے تھے سیاسی جماعتوں پر اچھا برا وقت آتا جاتا رہتا ہے ندیم چن نے کہا کہ 2018کے الیکشن میں پیپلز پارٹی ایک بار پھر ملک بھر میں اکثریت حاصل کرے گی انہوں نے کہا کہ ڈکٹیٹر کو اقتدار سے الگ کرنا اور 1973کا آئین اپنی اصل شکل میں بحال کرنا پیپلز پارٹی کا ہی کریڈٹ ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں