گورنمنٹ اسلامیہ ہائی سکول واڑہ عالم شاہ کی چھت بارشوں کی وجہ سے شدید متاثر،طلبا کھلے آسمان کی تلے بیٹھنے پر مجبور

Gvot. islamia High school wara alam shah malakwal news
گورنمنٹ اسلامیہ ہائی سکول واڑہ عالم شاہ کے اساتذہ سکول کی اکھاڑی گئی چھت کی مرمت اپنی مدد آپ کے تحت کرنے پر مجبور، طلباء بارشوں اور سکیورٹی کی مخدوش صورت حال میں کھلے آسمان تلے بیٹھنے پر مجبور۔
ملک وال (نامہ نگار) 1920میں بنایا جانے والا گورنمنٹ اسلامیہ ہائی سکول واڑہ عالم شاہ کے اساتذہ محمد رشید، امجد فاروق، محمد اکرم، منور حسین سمیت دیگر نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ کھڑکیوں، دروازوں، روشن دانوں اور پلستر وغیرہ کی مرمت و رنگ وروغن کے لئے حکومت پنجاب نے ساڑھے ستاون لاکھ روپے کے فنڈز جاری کئے۔اڑھائی ماہ قبل ٹھیکیدار نے سکول کمیٹی کی مشاورت سے مغربی کمرہ کی چھت تبدیل کرنے کے لئے چھت کی بجائے تمام کمرہ کو گرا دیااور میٹریل بھی اٹھا کر چلتا بنا جبکہ اس سے ملحقہ چھ دیگر کمروں کی چھت پر لگی ٹائلوں کو تبدیل کرنے کے لئے ٹائلیں بھی اکھاڑ دی۔ مغربی کمرہ گرائے جانے کی وجہ سے اب وہاں کوئی دیوار نہ ہے جو کہ سینکڑوں طلباء کے لئے شدید سکیورٹی رسک ہے۔ کمروں کی چھتوں سے ٹائلیں اکھاڑے جانے کی وجہ سے بارش کا تمام پانی چھت میں داخل ہو گیا جس سے کمروں کی چھت شدید متاثر ہونے کا خطرہ ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ڈیڑھ ماہ سے تعمیر و مرمت کا کام تعطل کا شکار ہے اور بچے بارش اور سکیورٹی کی مخدوش صورت حال میں کھلے آسمان تلے بیٹھ کر تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں۔ یاد رہے کہ اسی سلسلہ میں اہل دیہہ نے ڈی سی او منڈی بہاؤالدین مظفر خان سیال کو بھی ایک تحریری درخواست دی ہے جس میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ سکول کی متوقع از سر نو تعمیر نہ کی جائے اور پہلے سے قائم عمارت کو ہی مرمت کیا جائے کیونکہ پہلے سے موجود عمارت نئی بننے والی عمارات سے زیادہ پائیدار ہے۔ منگل کے روز اساتذہ نے احتجاجاً سکول کی چھت سے اضافی مٹی اتارنا شروع کر دی۔ اس موقع پر انہوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ سکول کی مرمت کا کام فی الفور مکمل کروایا جائے تاکہ طلباء بہتر ماحول میں تعلیم حاصل کر سکیں ۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں