عطائی ڈاکٹروں ،حکیموں اور پیرا میڈیکل سٹاف نے انسانی زند گیوں سے کھیلنے کا کاروبار سر عام چمکا رکھا ہے

doctor hakeem
ملک وال(نامہ نگار)عطا ئیت کا نا سور معا شرے میں بری طرح اپنا گھر کر چکا ہے عطائی ڈاکٹروں ،حکیموں اور پیرا میڈیکل سٹاف نے انسانی زند گیوں سے کھیلنے کا کاروبار سر عام چمکا رکھا ہے ،دیہات ہو یا شہر ہر جگہ عطائیت عروج پر ہے ،پاکستان کے زیادہ تر سر کاری ڈاکٹر ز اور پر فیسر ز رات رات بھر پر ائیویٹ ہسپتا لوں میں نوٹ چھا پنے پر لگے رہتے ہیں ملک میں صحت کی سہو لیات کا اتنہائی فقدان ہے جس کی وجہ سے سا دہ لو ح عوام عطائیت کا شکار ہو کر اپنی زند گیوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں حکومت کا قومی صحت پر و گرام ایک اچھاقدم ہے اس میں غریب اور بے بس لوگوں کو میرٹ کی بنا پر صحت کی سہو لیات فراہم کی جائیں اس میں سیاست کا عنصر نہیں ہونا چا ہے۔عوامی و سماجی حلقے
تفصیلات کے مطا بق میڈیا کے ایک سروے میں عوامی و سماجی حلقوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے مختلف بیانات میں کہا کہ ہمارے ملک میں صحت کی سہو لیات کا فقدان ہونے کی وجہ سے عطا ئیت کا نا سور معا شرے کی رگوں میں بس چکا ہے پاکستان میں ہر سال لاکھوں افراد صحت کی سہو لیات نہ ملنے پر خطر ناک بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں خطر ناک بیماریوں میں سر طان ،شوگر ،ہیپا ٹا ئٹس شا مل ہیں اس کے ساتھ ساتھ ڈینگی بہت خطرناک اور جا ن لیوا بیماری ہے ان تما م بیماریوں کا علا ج عام انسان کے بس کی بات نہیں ایک طرف ملک میں امراض روز بر وز بڑھ رہی ہیں تو دوسری طر ف عطا ئیت دو نمبر جعلی ڈاکٹر ز نے پنجے گاڑ رکھے ہیں پا کستان میں رجسٹرڈ ڈاکٹرز صرف دو لاکھ جبکہ عطا ئی دو گنا چار لاکھ ہیں عطا ئیت کا نا سور معا شرہ کی رگوں میں بری طرح بس چکا ہے عطا ئی ڈاکٹروں ،حکیموں اور پیرا میڈیکل سٹاف نے انسا ن کے ساتھ جانوروں جیسا سلوک روا رکھا ہواہے سرکاری ہسپتالوں کے زیادہ تر ڈاکٹرز اور پر فیسر ز رات رات بھر اپنے پرا ئیویٹ اداروں میں نوٹ چھا پنے میں لگے رہتے ہیں عطا ئیوں کو ریلیف دینے والے اپنے بچوں کا علا ج ان سے کروائے گے کیا یہ غریب عوا م کے ساتھ سرا سر ظلم ہے حکومت کا صحت پرو گرام ایک اچھا قدم ہے اس میں غر یب اور بے بس لوگوں کو میرٹ کی بنا پر صحت کی سہو لیات فراہم کی جائیں نہ کہ اس میں سیاست کا عنصر ہونا چا ہیے ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں