ممتاز قادری کی پھانسی،ملک بھر میں پر تشدد مظاہرے ، سیکیورٹی ہائی الرٹ

news-1456721087-2207

ممتاز قادری کو پھانسی دیئے جانے کے بعد ملک کے بیشتر شہروں میں پرتشدد احتجاج کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے ۔ کسی بھی قسم کے ناخوشگوار واقعات سے نمٹنے اور امن و مان کی صورتحال کو یقینی بنانے کےلئے متعدد شہروں میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ہے۔
تفصیلات کے مطابق سابق گورنر پنجاب سلمان تاثیر قتل کیس  میں ممتاز قادری کو آج(پیر) صبح اڈیالہ جیل میں تختہ دار پر لٹکائے جانے کے بعد ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں  اور ہنگاموں کے خدشات کے تحت سیکیورٹی کو ہائی الرٹ کر دیا گیا ہے۔راولپنڈی ،اسلام آباد، لاہور ، کراچی، ملتان،فیصل آبادسمیت ملک کے بیشتر شہروں میں پولیس کی بھاری نفری کو تعینات کر دیا گیاہے، دوسری جانب ملک کے متعدد شہروں میں ممتاز قادری کو پھانسی دیئے جانے کے بعد احتجاج کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔

احتجاجی مظاہروں کے پیش نظر اسلام آباد کے داخلی و خارجی راستے بند کر دیئے گئے ہیں جبکہ مشتعل مظاہرین نے مری روڈ بلاک کر دیا ہے۔ کراچی کے مختلف علاقوں میں بھی احتجاج جاری ہے کراچی ائیرپورٹ پر مظاہرین نے ائیرپورٹ میں گھسنے کی کوشش کی جسے پولیس نے ناکام بنا دیا۔ مشتعل مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئےپولیس کی جانب سے  لاٹھی چارج کیاگیا جس کے جواب میں مظاہرین نے پولیس پر پتھراؤکیا جس کے نتیجے میں اے ایس ایف کا ایک اہلکار زخمی ہو گیا۔احتجاج کے بعد کراچی کے مختلف علاقوں میں پٹرول پمپ بند کر دیئے گئے ہیں۔

لاہور میں بھی شاہدرہ چوک پر احتجاج جاری ہے راوی پل کو ہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند کر دیا گیا ہے. بھاٹی چوک میں مشتعل مظاہرین نے متعدد گاڑیوں کے شیشے توڑ دیئے ، امن و امان کی بگڑتی ہوئی صورتحال کو کنٹرول کرنے کےلئے پولیس موقع پر پہنچ گئی ہے۔پنجاب کے دوسرے شہروں میں بھی مظاہرین سڑکوں پر آگئے ہیں،   مانگا منڈی پر دھرنا جاری ہے۔چنیوٹ میں دوسرے ضلعوں سے پولیس کی بھاری نفری طلب کر لی گئی ہے۔ڈی پی اور چنیوٹ کا کہنا ہے کہ حکومتی رٹ کے خلاف کسی کو بھی قانون اپنے ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جائے گی اور ایسا کرنے والے افراد کے خلاف قانونی کارروائی کرتے ہوئے مقدمات درج کئے جائیں گے۔ دوسری جانب سنی تحریک و دیگر مذہبی جماعتوں کی جانب سے آج مختلف شہروں میں ہڑتال کا اعلان کیا گیا ہے۔جبکہ تمام جماعتوں نے اپنے اجلاس طلب کر لئے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں