پاکستان توانائی بحران سے دوچار ہے ڈیم نہ بنانے کے ساتھ ساتھ اسکی ایک بڑی وجہ بجلی چوری بھی ہے

Nadeem Mumtaz mustaqbil pakistan mbdin news
منڈی بہاؤالدین:مستقبل پاکستان کے چیئر مین انجینئر ندیم ممتاز قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان توانائی بحران سے دوچار ہے ڈیم نہ بنانے کے ساتھ ساتھ اسکی ایک بڑی وجہ بجلی چوری بھی ہے۔ بجلی چوری نہ رکنے کے باعث بجلی پیدا اور فراہم کرنیوالے ادارے مسلسل خسارے میں جا رہے ہیں۔وہ یہاں مستقبل پاکستان کے ضلعی صدر شیر محمد گوندل سے ملک میں توانائی اور اس کی وجوہات پر تبادلہ خیال کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا حکومت نے بجلی چوری کا قانون بنا کر اچھا اقدام کیا ہے لیکن ایسے اقدامات سے صرف عام صارف کی ہی گرفت ہوتی ہے۔ بڑے بڑے مگرمچھوں کو کوئی پوچھتا ہی نہیں۔انہوں نے کہا حکومت اگر اس قانون کے تحت بجلی چوروں کے تدارک میں سنجیدہ ہے تو پھر پارلیمنٹ ہاؤس میں بیٹھے بڑے بڑے بجلی چوروں کو پکڑنے سے شروعات کی جائیں۔ فیکٹریوں ملوں اور کارخانوں کو چوری بجلی کے ذریعے چلانے والوں کا محاسبہ کیا جائے۔انہوں نے کہا اربوں، کروڑوں روپے کے نادہندگان کے گرد شکنجہ کسا جائے انکی جائیدادوں کو قرق کرکے پہلے سنجیدگی ظاہر کی جائے ورنہ پارلیمنٹ میں تو ایسے بہت سارے بل آئے جو آج فائلوں کی گرد کے نیچے دبے پڑے ہیں۔ چیئر مین انجینئر ندیم ممتاز قریشی نے کہابجلی چوروں کو پکڑنے کیساتھ ساتھ محکمے میں موجود انکے سہولت کاروں کو بھی پکڑا جائے کیونکہ جب تک میٹر ریڈر خود بجلی چوری میں ملوث نہیں ہوتا تب تک کوئی بھی صارف میٹر ٹمپرنگ کر سکتا ہے نہ ہی کسی میں کنڈا ڈالنے کی جرا ء ت ہوتی ہے۔ انہوں نے کہاحکومت بجلی چوری روکنے کے ساتھ محکمانہ احتساب کا شکنجہ کسنے کی جانب بھی توجہ دے اور جان لیوا براہ راست اور بالواسطہ ٹیکسز ختم کرکے صارفین کو سستی بجلی کی سہولت فراہم کرے

اپنا تبصرہ بھیجیں