ڈاکٹر کمیونٹی صبر سے کام لے،پولیس رضاارشد کی طرح بہت جلد ڈاکٹر شاہد نذیر کے قاتلوں کو بھی گرفتار کرلے گی

media mic journalist press coverage

منڈی بہاؤالدین(بیورورپورٹ)ڈی پی اومنڈی بہاؤالدین راجہ بشارت محمود دیانتدار ،نڈر اور منجھے ہوئے پروفیشنل پولیس آفیسر ہیں ۔کوئی ایس پی دوسری بار ڈی پی او تعینات نہیں ہوتا لیکن راجہ بشارت کی یہ مسلسل چوتھی ڈی پی اوشپ ہے۔ڈاکٹر کمیونٹی صبر سے کام لے،پولیس رضاارشد کی طرح بہت جلد ڈاکٹر شاہد نذیر کے قاتلوں کو بھی گرفتار کرلے گی ۔پنجاب میں سینکڑوں کی تعداد میں ایس پی رینک کے آفیسرزموجود ہیں جن میں سے صرف 28آفیسرزڈی پی او تعینات ہوتے ہیں باقی آفیسر زساری سروس کوئی پوسٹنگ نہیں لے پاتے اور گمنامی میں ہی ریٹائرڈ ہوجاتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار معروف جرنلسٹ حامد مختار نے میڈیا کو جاری اپنے بیان میں کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ راجہ بشارت محمود ہائی پروفائل پولیس آفیسر ہیں جن کے کریڈٹ پر شاندار سروس ریکارڈ ہے انہوں نے سخت ترین حالات میں بھی پولیس کی کمانڈ کی ہے اور اﷲ تعالی نے انھیں ہمیشہ کامیابیوں سے نوازا ہے ۔ہم سمجھتے تھے کہ سابق ڈی پی او منڈی بہاؤالدین سیدجنیدارشد شاہ جو Legacyاور ورکنگ سٹائل چھوڑ کے گئے تھے نئے آنے والے ڈی پی اوراجہ بشارت شائد اسے نہ سنبھال پائیں لیکن راجہ بشارت محمود نے ہمارے اس تصور کو زائل کرکے رکھ دیا۔ڈی پی او راجہ بشارت نے پولیس میں سیاسی مداخلت برداشت نہیں کی یہی وجہ ہے کہ انھوں نے ایک سال کے اندر 63کرپٹ ،نااہل اور بدتمیز پولیس اہلکاروں و افسروں کو ملازمت سے برطرف کردیا ہے ۔اتنی بڑی تعداد میں پولیس ملازمین کبھی ڈسمس نہیں ہوئے جتنے راجہ بشارت نے کئے ہیں ۔ڈی پی او راجہ بشارت کو ڈی پی اوآفس میں قائم نوسربازوں کے نیٹ ورک کو توڑتے ہوئے انکے سہولت کاروں کو بارہ پتھر باہر کرناہوگاجو سال دوسال تک مخصوص لوگوں کی ڈی پی اوزتک رسائی کرواتے ہیں جو ڈی پی اوز کے قصیدے پڑھتے اور ذاتی کام لیتے نہیں تھکتے لیکن پوسٹنگ پیریڈ میچورہوتے ہی ہر ڈی پی اوکو آڑے ہاتھوں لے لیتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں