ضلع بھر میں قتل، ڈکیتی اور راہزنی کی بڑھتی وارداتیں روزانہ کا معمول بن گئیں،پولیس ملزموں کا سراغ لگانے میں ناکام

choor chor arrested

ضلع بھر میں قتل، ڈکیتی، چوری ، موٹر سائیکل چھیننے اور راہزنی کی بڑھتی وارداتیں روزانہ کا معمول بن گئیں ، پولیس ملزموں کا سراغ لگانے میں ناکام ، شہری عدم تحفظ کا شکار ہو گئے۔
منڈی بہاؤالدین (نمائندہ جنگ) منڈی بہاؤالدین اور اس کے دیگر علاقوں میں قتل ، ڈکیتی، موٹر سائیکل چھیننے اور راہزنی کی وارداتوں میں خوفناک اضافہ ہو چکا ہے موٹر سائیکل چھیننے اورراہزنی کی وارداتوں اب روزانہ کا معمول بن چکی ہیں ۔ منڈی بہاؤالدین سر شام ایک پرائیویٹ ہسپتال میں نامعلوم افراد نے ایک نوجوان ڈاکٹر شاہد نذیر کو قتل کر دیا گیا، تھانہ پھالیہ کے علاقہ لیدھر میں 20سالہ نوجوان عثمان کو موٹر سائیکل چھیننے کی واردات میں مزاحمت پر قتل کر دیا گیا، مونگ میں موبائل فرنچائز کے سیلز مین کو دن دیہاڑے ڈکیتی کی واردات میں فائرنگ کر زخمی کر دیا گیا۔ تھانہ ملکوال کے علاقہ سرشام مسلح ڈاکونوجان سے موٹر سائیکل کر فرار ہو گئے مزاحمت پر فائرنگ کر کے ایک نوجوان مون کو زخمی کر دیا گیا۔تھانہ سول لائن کے علاقہ میں ڈاکوؤں نے دن دیہاڑے ایک سگریٹ کمپنی کے ملازمین سے سات لاکھ نقدی لوٹ لی، ساہنا کے قریب سرشام ڈاکوؤں نے ایک مذہبی اجتماع پر جانے والی وین میں سوار افراد پر فائرنگ کی۔ اسی طرح تھانہ گوجرہ، میانہ گوندل، کٹھیالہ شیخاں ، بھاگٹ اور تھانہ پاہڑیانوالی کے علاقوں میں بھی قتل ، ڈکیتی ، موٹر سائیکل چھیننے کی وارداتیں عام ہو چکی ہیں۔ مختلف کمپنیوں کے سیلز مینوں سے دن دیہاڑے نقدی چھیننے کی وارداتیں عام ہیں ۔ وارداتوں کی بڑھتی ہوئی صورتحال کے پیش نظر شہری ویران علاقوں سے گذرتے ہوئے خوف محسوس کرتے ہیں ۔ جبکہ پولیس کو اطلاع دی جائے تو کوئی کاروائی نہیں کی جاتی۔ باوثوق ذرائع کیمطابق ان جرائم پیشہ عناصر کی پشت پناہی چند بااثر سیاسی شخصیات اور اراکین اسمبلی بھی کرتے ہیں جن کی وجہ سے پولیس ان کیخلاف کاروائی کرنے سے گریز کرتی ہے۔ضلع بھر میں قتل، ڈکیتی اور راہزنی کی بڑھتی ہوئی نان سٹاپ وارداتوں کیخلاف پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما ، سابق چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی ندیم افضل چن اور پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر طارق محمود چدھڑ نے شدید الفاظ میں پولیس کی ناقص کارکردگی کی مذمت کی ہے انہوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف سے مطالبہ بھی کیا کہ وہ ڈاکوؤں ، چوروں کی پشت پناہی کرنے والے اپنی پارٹی کے اراکین اسمبلی اور عہدیداروں کیخلاف ایکشن لیں جبکہ ڈی پی او راجہ بشارت کو فوری طور پر تبدیل کر کے کسی ایماندار پولیس افسر کو ڈی پی او تعینات کیا جائے ۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں