کسٹم انٹیلی جنس گوجرانوالا نے چائے کی سمگلنگ کے الزام میں قمر چائے فیکٹری کے مالک اور اس کے ملازم کیخلاف مقدمہ درج کر لیا

FIR Custom

کسٹم انٹیلی جنس گوجرانوالا نے چائے کی سمگلنگ کے الزام میں قمر چائے فیکٹری کے مالک قمر خان اور اس کے ملازم حمید نیازی کیخلاف مقدمہ درج کر لیا ، برآمد کی گئی چائے کی 437بوریاں بھی بحق سرکار ضبط کر لی گئی ہیں، قمر خان اور اس کے تین بھائی حالیہ بلدیاتی الیکشن میں کونسلر منتخب ہوئے ہیں جبکہ قمر خان نے میونسپل کمیٹی ملک وال کی چیئرمین شپ کیلئے مسلم لیگ ن کے ٹکٹ کیلئے بھی اپلائی کر رکھا ہے۔
ملک وال(نامہ نگار) کسٹم انٹیلی جنس گوجرانوالا کی ٹیم نے 22اور 23جنوری کو ملک وال میں قمرٹی کمپنی کے مختلف گوداموں میں چھاپے مار کر چائے کی 437بوریاں برآمد کر کے ویئر ہاؤس گوجرانوالا منتقل کر دی تھیں۔ ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ کسٹم انٹیلی جنس گوجرانوالا محمد انور نے بتایا کہ یہ کمپنی غیر ملکی چائے سمگلنگ کے ذریعے لاتی ہے جس کی کسٹم ڈیوٹی ادا نہیں کی گئی۔کمپنی مالک قمر خان کو مہلت دی گئی کہ وہ برآمد کی گئی کسٹم ڈیوٹی کی ادائیگی کے کاغذات چیک کروائیں مگر وہ دی گئی مہلت کے ایام میں کاغذات پیش نہیں کر سکا ۔ انہوں نے بتایا کہ انٹیلی جنس و انویسٹیگیشن آفیسر ایف بی آر گوجرانوالا سید ماجد رضا کی مدعیت میں فیکٹری مالک قمر خان اور اس کے ملازم حمید نیازی کیخلاف کسٹم ایکٹ 1969کے تحت مقدمہ درج کر دیا گیا ہے جبکہ مزید تحقیقات اور تفتیش جاری ہے۔ یاد رہے کہ قمر خان نے میونسپل کمیٹی ملکوال کی چیئرمین شپ کے ٹکٹ کیلئے مسلم لیگ ن کو درخواست دے رکھی ہے۔۔۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں