منڈی بہاوالدین مقتول 22سالہ علی حسنین کو ابھی تک انصاف نہ مل سکا ملزمان کو پولیس کی طرف سے کھلی آزادی

12439202_1086262041425194_630266621607248891_n
منڈی بہاوالدین تھانہ پھالیہ کی حدود کوٹ رحم شاہ میں قتل ہونے والے 22سالہ علی حسنین کو انصاف دینے کے بجائے پولیس ہاتھ پر ہاتھ دھرے ملزمان کے ملک سے فرار ہونے کا انتظار کر رہی ہے اب تک دو ملزمان شاہد اور نزاکت علی ولد اورنگ زیب ملک سے فرار ہو چکے ہیں
پولیس نے ملزم لال خان کو گرفتار کیا ہے مگر دن کو اسے چھوڑ دیا جاتا ہے وہ باہر نکل کر مقتول کے خاندان پر دباو ڈالنے کے ساتھ ساتھ علاقہ کے بااثر افراد سے ملاقاتیں کر کے اپنی رہائی کا بندوبست کررہا ہے قتل کے کیس کے ملزم کو اس طرح پولیس کی طرف سے کھلی چھوٹ کے پیچھے سیاسی ہاتھ بھی بتائے جا رہے ہیں مقتول کا خاندان تھانوں کے چکر لگانے پر مجبور مگر انصاف انکی پہنچ سے دور۔ متاثرہ خاندان کی ضلع انتظامیہ ڈی پی او راجہ بشارت اور ڈی سی او مظفرخان سیال سے انصاف کی اپیل ملزمان کی طرف سے الٹا ان پر کیس کرنے کی دھمکیاں اور کیس واپس لینے کے لیے دباو.دیگر فرار ملزمان میں راسب علی عرف راسو ، جانی رانجھا ولد غلام عباس ، شاہد رانجھا ولد عنائیت رانجھا ، قمر عباس ولد غلام رسول اور قبال ولد میاں خان شامل ہیں جن کو حراست میں لینے کے لیے پولیس کی طرف سے چھاپہ تک نہ مارا گیا

اپنا تبصرہ بھیجیں