چار ماہ گذر جانے کے باوجود قتل کے ملزم گرفتار نہ ہوسکے، ورثا کا احتجاجی دھرنہ، ٹریفک دو گھنٹے تک بلاک

Gojra mandi bahauddin news

ملک وال(نامہ نگار) چار ماہ گذر جانے کے باوجود قتل کے ملزم گرفتار نہ ہوسکے ورثاء نے انصاف نہ ملنے پر گوجرہ پولیس کیخلاف سرگودھا گجرات روڈ پر احتجاجی دھرنا دیدیا، مظاہرہ کرنے والی خواتین کی خود سوزی کی کوشش، سڑک دو گھنٹے بلاک رہنے سے گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں، ڈی ایس پی نے سات روز میں ملزمان گرفتار کرنے کی یقین دہانی کروا دی۔ تفصیلات کیمطابق گوجرہ کا رہائشی قمر شاہ 4ماہ قبل قتل ہوا تھا جس پر تھانہ گوجرہ میں سلطان شاہ،فضل شاہ، نذر شاہ اور3نامعلوم افراد کیخلاف مقدمہ درج کیا گیا لیکن چار ماہ گذر جانے کے باوجود پولیس نے ملزمان کیخلاف کوئی کاروائی نہیں کی اور ورثا کو ٹالتے رہے۔ گوجرہ پولیس کی عدم دلچسپی اور ملزمان کی عدم گرفتاری کیخلاف مقتول کے ورثاء نے سرگودھا گجرات روڈ بلاک کر دیا اور پولیس تھانہ گوجرہ کے خلاف شدید نعرے بازی کی احتجاج کے دوران عورتوں نے خود پر پٹرول کا چھڑکاؤ کر کے آگ لگانے کی کوشش کی۔ ڈی ایس پی ملک وال رانا محمد اسلام موقع پر پہنچے او ر مظاہرین کو یقین دلایا کہ وہ ملزمان کو سات روز میں گرفتار کر کے انہیں انصاف فراہم کریں گے۔ مقتول کے ورثا نے ڈی ایس پی سے کہا کہ اگر ہمیں انصاف مہیا نہ کیا گیا تو ہم کسی کا کوئی نقصان نہیں کریں گے ہم سارا خاندان خود کو آگ لگا لیں گے اس موقع پر مقتول کے باپ غلام رضا شاہ نے کہا کہ میں وزیر اعلی پنجاب اور آئی جی پنجاب سے اپیل کرتا ہوں کہ ہمیں فی الفور انصاف مہیا کیا جائے۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں