جنرل پوسٹ آفس منڈی بہائوالدین میں ڈکیتی، مزاحمت پر ڈاکوؤں نے چوکیدارکو قتل کردیاگیا

murder with knife blood qatal

سٹی تھانہ سے چند میٹرفاصلہ پر قائم جنرل پوسٹ آفس میں ڈکیتی اورگارڈکے قتل نے پولیس سیکیورٹی کا پول کھول دیا، جی پی اومیں سی سی ٹی وی کیمروں سمیت دیگرسیکیورٹی انتظامات سے بے خبری لمحہ فکریہ،شہرکی تاجر برادری میں تشویش کی لہر۔
منڈی بہاؤالدین(بیورورپورٹ) تفصیلات کے مطابق تھانہ سٹی منڈی بہاؤالدین سے چندمیٹرفاصلے پرقائم جی پی او کی عمارت میں ڈکیتی اورمزاحمت پر چوکیدارکے قتل نے پولیس کے سیکیورٹی انتظامات کا پول کھول دیاہے،گذشتہ روزجنرل پوسٹ آفس منڈی بہاؤالدین میں ڈکیتی کی واردات کے دوران مزاحمت پر ڈاکوؤں نے مزاحمت پر چوکیدارکا گلاکاٹ کرقتل کردیاگیا۔رات کی تاریکی میں ڈاکوجی پی او بلڈنگ میں داخل ہوگئے اورلاکرتوڑنے کی کوشش کی ،نجی کمپنی کے 55سالہ سکیورٹی گارڈ اعجازنے مزاحمت کی توڈاکوؤں نے تیزدھارآلہ سے اسکا گلاکاٹ دیاجس سے وہ موقع پرجاں بحق ہوگیا۔
جی پی اوذرائع کے مطابق ڈاکولاکھوں روپے مالیت کے ٹکٹس اورنقدی لوٹ کرلے گئے ہیں۔سٹی تھانہ سے چند میٹرفاصلہ پر قائم جی پی اوبلڈنگ میں ڈکیتی کی دلیرانہ واردات سے شہریوں میں غم وغصہ کی فضاپیداہوگئی ہے۔اس واردات سے ضلعی پولیس کی جانب سے امن وامان کو یقینی بنانے کا پول بھی کھل گیاہے،شہرکے سب سے بڑے جنرل پوسٹ آفس میں CCTVکیمرے نہ ہونا اورپولیس کا گشت نہ ہونا پیشہ وارانہ غفلت کا ثبو ت ہے۔ڈکیتی اورقتل کی اس واردات کے بعد جی پی اوملازمین نے کام بندکرکے ہڑتال کردی ہے،ملازمین نے میڈیاکوبتایاکہ جب تک ہمیں تحفظ فراہم نہیں کیاجاتااورملزمان کو گرفتارنہیں کیاجاتااس وقت پر ہڑتال جاری رہے گی ۔شہرمیں ڈکیتی کی دلیرانہ واردات سے تاجربرادری میں تشویش کی لہردوڑگئی ہے،عوامی حلقوں نے ڈی پی اومنڈی بہاؤالدین سے مطالبہ کیاہے کہ شہرکے اندرپولیس کاگشت بڑھایاجائے اورآئندہ ایسے واقعات کی روک تھام کیلئے ٹھوس اقدامات کئے جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں