157

کورونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر اسسٹنٹ کمشنر ملکوال کی جانب سے ہدایات جاری

اسسٹنٹ کمشنر ملکوال کیطرف سے ہدایات. کرونا وائرس جیسی خطر ناک صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوۓ پنجاب میں 14 روز کے لیے لاک ڈاؤن کے احکامات صادر ہوئے ہیں۔ ضروریات زندگی کے اہم تقاضوں کو پورا کرنے کے لیے درج ذیل افراد / اداراوں کو محدود معاملات کی ساتھ حرکت کرنے کی رعائت دی گئی ہے۔

1.پرائیوٹ پبلک. ٹرانسپورٹ چھوٹی یا بڑی شہر یا بیرون شہر چلانے کی قطعاً اجازت نہیں ہوگی۔

2.کوئی بھی شخص ایک شہر یا گاؤں سے دوسرے شہر یا گاؤں غیر ضروری سفر نہیں کر سکے گا ۔موٹر سائیکل پر ڈبل سواری پر پابندی عائد کردی گئی ہے.

3.بہت ہی ضروری ۔ یا خریداری کی صورت میں بمعہ شناختی کارڈ شہر کے اندر کی جا سکے گی ۔ اور ماسک کے ساتھ

4.فروٹ شاپس ۔کریانہ ۔گراسری شاپ ۔ ریڑھی۔پر ایک وقت میں ایک گاہک ہو سکے گا۔ رش کی یا چار سے زائد کی اجازت نہیں ہو گی۔لیکن دکاندار اور گاہک کو ماسک وغیرہ لگانا لازمی ہوگا۔بغیر ماسک کے نہیں

5.ایمرجنسی کی صورت میں ڈاکٹر کے پاس موٹر سائیکل یا گاڑی وغیرہ پر ایک خاتون یا فرد کو بٹھا کر لیجایا جا سکتا ہے۔ ماسک پہن کر

6.شہر کے محلے میں ایک تندور برائے روٹیاں لگانے کی اجازت ہوگی وہاں پر بھی ایک سے زائد لوگ نہیں کھڑے ہو سکیں گے۔ دکاندار اور گاہک کو ماسک لازمی پہننا ہوگا

7.ڈاکٹر کے پاس کسی ایمرجنسی کی صورت میں اپنی سواری پر دو افراد جا سکیں گےوہ بھی قریب ترین جگہ پر بمعہ ماسک۔

8.میڈیا کے ورکنگ جرنلسٹس جن کے پاس اپنا ادارے کا کارڈ ہوگا بمعہ کیمرہ مین اپنی حدود شہر میں رپورٹنگ کر سکے گا ۔
9.دوسرے شہر میں رپورٹنگ یا سفر کی اجازت نہیں ہوگی

10.جنازے کی صورت میں کم سے کم لوگ اکھٹے ہوں گے ۔اور ایک آدمی دوسرے آدمی سے تین فٹ دوری پر ہو گا۔اور شاٹ سے شاٹ وقت دیا جائے گا۔بمعہ ماسک ہونا لازمی ہوگا۔

11.پٹرول پمپس کھلے ہونگے ۔رش نہیں ۔ ماسک اور تمام حفاظتی اقدامات اور ایس او پی کے ساتھ ۔

12.بنک کھلے رہینگے ۔لیکن رش نہیں۔ چار سے زائد افراد اندر یا باہر اکٹھےنہیں ہو سکتے۔بمعہ ماسک ہونا لازمی ہوگا۔

13.یہ جزوی لاک ڈاؤن 24 مارچ سے 7 اپریل کی رات 12بجے تک ہو گا

  1. کھاد ڈیلر ۔زرعی ادویات آن لائن ۔ اپنی گاڑی پر جا کر سروس مہیاء کی جا سکے گی ۔پبلک کو نمبر شئیر کر دئیے جائیں گے۔ایس او پی کے مطابق۔

15.آٹا شاپس کھلی رہیں گی ۔ کسی بھی دکان پر رش نہیں کر سکتے دکاندار اور گاہک کا ماسک پہننا ضروری ہوگا۔

16.خدانخواستہ کسی ایمر جنسی کی صورت میں کسی بڑے شہر میں مریض کو ڈاکٹر کی ریکمنڈیشن پر شفٹ کیا جا سکے گا۔

17.کوئی بھی غیر ضروری موومنٹ شہر یا بیرون شہر کی اجازت نہیں ہو گی ۔گرفتار کر لیا جائے گا۔

18.اس لاک ڈاؤن کو کافی سارے ادارے مانیٹر کریں گے ۔بلاوجہ گیدرنگ ۔موومنٹ سے گریز کریں صرف اور صرف گھر کے اندر رہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں