144

فنڈز کی عدم فراہمی پر دریائے جہلم کا تعمیراتی کام تاخیر کا شکار

ملک وال (نامہ نگار) فنڈز کی عدم فراہمی پر دریائے جہلم کا تعمیراتی کام تاخیر کا شکار ہو گیا، پنجاب حکومت فوری طور پر فنڈز فراہم کرکے پل کی تعمیر کا کام جلد مکمل کروائے تاجر اور عوامی حلقوں کا وزیر اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ،

تفصیلات کیمطابق سابق ن لیگی صوبائی حکومت نے تین تحصیلوں ملکوال، پنڈدادنخان اور بھیرہ کی لاکھوں عوام کے دیرینہ مطالبہ پر ملکوال کے قریب دریائے جہلم پر ٹریفک پل کی تعمیر کا منصوبہ اقتدار کے آخری ایام میں منظور کرکے کچھ فنڈز بھی جاری کر دیے جس سے پل کی تعمیر کا کام موجودہ حکومت کے دور میں شروع ہو گیا مزید فنڈز جاری نہ ہونے کے سبب پل کا تعمیراتی کام تاخیر کا شکار ہو گیا،

یہ بھی پڑھیں: چک نظام وکٹوریہ ریلوے پل پر لوہے کی چاریں بچھانے کے منصوبہ کے تعطل کی خبریں شائع ہونے پر وزیر ریلوے شیخ رشید نے نوٹس لیتے ہوئے کام 15روز میں مکمل کرنے کا حکم دیدیا

یاد رہے کہ ملکوال اور پنڈدادنخان کے درمیان دریائے جہلم کی وجہ سے شہریوں کو بذریعہ منڈی بہاؤالدین یا بھیرہ موٹروے انٹرچینج قریباٌ 80 سے 100کلومیٹر سے زائد فاصلہ طے کرنا پڑتا ہے اور اگر یہ پل بن جائے تو یہ فاصلہ کم ہو کر 20سے 25کلومیٹر رہ جاتا ہے دریائے جہلم پر ٹریفک پل نہ ہونے سے تین تحصیلوں کی لاکھوں عوام کو شدید سفری مشکلات کا سامنا ہے،

تاجر و عوامی حلقوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر فنڈز جاری کرکے پل کا تعمیراتی کام جلد مکمل کرایا جائے تاکہ عوام کو کم ترین سفری سہولت میسر ہو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں