78

کیا آپ جانتےہیں دنیا میں سب سےپرانی چیز کونسی ہے؟

کیا آپ جانتے ہیں کہ ہماری دنیا میں سب سے پرانی چیز کیا ہے گو اس کا بنیادی تعلق زمین سے نہیں ہے لیکن موجود ہمارے ہی سیارے پر ہے۔

چلیں پہلے ہم آپ کو پچاس برس پرانا ایک واقعہ بتاتے ہیں۔ ہوا یوں تھا کہ 28 ستمبر 1969 کو ایک شہاب ثاقب آسٹریلیا کی ریاست وکٹوریا کے ایک نواحی گاؤں مرچیسن کے مقام پر گرا تھا لیکن اصل خبر یہ نہیں بلکہ اس پرانی بات سے اب ایک نئی خبر نکلی ہے جو یہ ہے کہ تقریباً 100 کلو وزنی وہ شہاب ثاقب اپنے ساتھ کچھ اور بھی لے کر آیا تھا جو سائنسدانوں کے مطابق عمر کے لحاظ سے کام از کم زمین پر تو سب سے سینئر ہے۔

مختلف غیر ملکی ویب سائٹس کی رپورٹس کے مطابق اس شہاب ثاقب کی درزوں میں ستاروں کی گرد کے ایسے ذرات یا دانے پائے گئے ہیں جن میں سے کچھ 7 ارب سال پرانے بھی ہیں اس طرح وہ ذرات اور خود وہ شہاب ثاقب زمین پر سب سے پرانی اشیاء ہویئں اور زمین ہی کیا یہ تو ہمارے سورج کے وجود میں آنے سے بھِی ڈھائی ارب سال پہلے کے ہوئے جو 4.6 ارب سال پرانا ہے۔

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ان ذرات میں سے 60 فیصدی .64 ارب سال سے لے کر 4.9 ارب سال پرانے ہیں جبکہ کچھ 5.6 ارب سال یا اس سے پہلے کے ہیں۔ اس طرح یہ شہاب ثاقب اور اس میں ملنے والے ستاروں کے ذرات ہماری زمین، سورج اور نظام شمسی کے معرض وجود میں آنے سے بھی پہلے کے ہیں۔

گرد کے یہ دانے ‘پری سولر گرینز’ کہلاتے ہیں کیوں کہ یہ سورج سے پہلے وجود میں آئے۔ محققین کا کہنا ہے کہ ان کے ذریعے ستاروں کی تشکیل سمجھنے میں مدد ملے گی۔ ان کا کہنا ہے کہ اس سے قبل لوگوں کا خیال تھا کہ کہکشاں کے ستاروں کی تشکیل کی شرح مستقل یعنی نہ تبدیل ہونے والی ہے لیکن اب ہمارے پاس 7 ارب سال پہلے ہونے والی ستاروں کی تشکیل کا بھی ثبوت ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں