125

منڈی بہاوالدین میں شہریوں کی زندگیاں غیر محفوظ۔ آٸے روز چوری ڈکیتی سڑیٹ کرٸم کی وارداتيں سرعام۔ پولیس بے بس

منڈی بہاوالدین ( شوکت سجاد ) شہر منڈی بہاوالدین میں شہریوں کی زندگیاں غیر محفوظ آٸے روز چوری ڈکیتی سڑیٹ کرٸم کی وارداتيں سرعام اور پولیس مکمل طور پر بے بس نظر اتی ہیں بلکہ اب شہری پولیس پر عدم اعتماد کر رہے ہیں کیونکہ پولیس اب خاموش تماشاٸی بنی ہوٸی۔

آپ کو یاد ہوگا چند ہفتے پہلے پھالیہ روڈ پر دن دیہاڑے ڈکیتی کی دو وارداتيں ہوٸی اور دو دن پہلے شہر کی مشہور جگہ جرمن چوک کے پاس ایگل بک ڈپو شاپ پر دن پانچ بجے ڈکیتی کی گھناونی واردات ہوٸی اور ٹھیک اس واردات سے دودن پہلے سٹی سی این جی کے سامنے پلازہ کے پاس دن پانچ بجے 125ہنڈا 2019ماڈل چوری ہوگیا اور 15پرکال کرنے باوجود پولیس ایک گھنٹے کی تاخیر سے موقع پر پہنچ کر اے ایس آٸی کہنے لگا اپ کا موٹرسائيکل چوری نہی ہوا پھر اس کا تالہ زمین پر گرا مل گیا جس پر اے ایس اٸی سوری بول کر چلا گیا جس کی تاحال ایف آٸی آر درج نہ ہوسکی۔

عوام الناس منڈی بہاوالدین نے وزیراعلی اور وزیراعظم عمران خان سے اپیل کی کہ اپ نے پورے پنجاب سے بیوروکریٹس تبدیل کیے اور منڈی بہاوالدین کو یتیم ضلع سمجھ کر اس کی تبدیلی نہی کی جس کا قرض عوام الناس دینا پڑھ رہا ہے خداراہ اس ضلع میں بھی کوٸی ایسا کمانڈر لگا دو جو کراٸم اور جرائم پر بھی قابو ڈال سکے اور شہریوں کی جان ومال کی اچھے طریقے حفاظت کر سکے تاکہ تاجر برادری میں چوری ڈکیتی وغیرہ جیسے گھناونے جرم سے جو خوف وحراس پھیلا ہوا ہے اس چھٹکارہ مل سکے اور کاروبار کرنے میں آسانی پیدا ہوسکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

منڈی بہاوالدین میں شہریوں کی زندگیاں غیر محفوظ۔ آٸے روز چوری ڈکیتی سڑیٹ کرٸم کی وارداتيں سرعام۔ پولیس بے بس” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں