87

پاسپورٹ پر نام درسگتی کروانے پر پاسپورٹ آفس کے عملہ اور سائل میں لڑائی، عملہ نے سائل کے کپڑے پھاڑ دئے اور دھکے دے کر دفتر سے باہر نکال دیا

منڈی بہاءالدین۔ پاسپورٹ دفتر میں عملہ اور سائلین میں لڑائی، سائل کے کپڑے پھاڑ دیے۔ دھکے دیکر بنا فارم جمع کیے دفتر سے باہر نکال دیا۔ فارم پر نام کے سپیلنگ غلط لکھے جانے کی شکایت پر عملہ نے شہری کی درگت بنادی۔

پاسپورٹ دفتر منڈی بہاوالدین میں عملہ نے سائل کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا اور اسے بچوں سمیت دفتر سے باہر نکال دیا۔ نواحی گاوں مونگ کا رہائشی آصف نامی شہری اپنی بیوی اور دو بچوں سمیت پاسپورٹ بنوانے کے لیے آیا۔ ڈیٹاانٹری آپریٹر نے فارم میں بچی کے نام کے سپیلنگ غلط لکھ دیے ۔

یہ بھی پڑھیں: پاسپورٹ کے حصول کے لیے آنے والے سائلین زلیل وخوار ہونے لگے. انتظامیہ خاموش تماشائی بن کر رہ گئی. ویڈیو دیکھیں

متاثرہ شہری آصف نے میڈیا کو بتایا فارم پر غلط انٹری کی نشاندہی کی تو اسے درست کرنے کی بجائے گارڈز و دیگر عملہ نے اسے بیوی بچوں دیگر سائلین کے سامنے تشددکا نشانہ بنایا اور میرے کپڑے پھٹ گئے۔اور بغیر فارم جمع کئے ہمیں زبردستی دفتر سے نکال دیا۔

دیگر سائلین نے بتایاکہ عملہ کا رویہ انتہائی نامناسب ہے اور بغیر رشوت کے کام ناممکن ہے۔ صبح سے شام تک دفتر کے باہر بیٹھے رہتے ہیں لیکن کوئی شنوائی نہیں ہوتی۔ ایجنٹوں کی مداخلت پر فائل جمع ہوتی ہے ورنہ مختلف اعتراضات لگا دیے جاتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: سائلین کے مسائل حل کرنا میری اولین ترجیح ہے۔ میں ہر وقت منڈی بہاوالدین پاسپورٹ آفس صوفی سٹی موجود ہوتا ہوں۔ انچارج پاسپورٹ آفس منڈی بہاوالدین

سائلین نے وزیراعظم پاکستان اور وزارت داخلہ سے مطالبہ کیا ہے کہ پاسپورٹ دفتر منڈی بہاوالدین میں کرپشن بندکروائی جائے اور سائیلین کے ساتھ بدتمیزی کرنے والے اہلکاروں کو نوکری سے نکالا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

پاسپورٹ پر نام درسگتی کروانے پر پاسپورٹ آفس کے عملہ اور سائل میں لڑائی، عملہ نے سائل کے کپڑے پھاڑ دئے اور دھکے دے کر دفتر سے باہر نکال دیا” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں