60

ملکوال سٹی اور میانی فیڈرز کی بجلی چار گھنٹے سے زائد بند رہنے سے شہری پریشان. ٹرانسفارمر تبدیلی کیلئے پرمٹ لیا تھا ، گیپکو انتظامیہ

ملک وال (نامہ نگار) ملک وال سٹی اور میانی فیڈرز کی بجلی چار گھنٹے سے زائد بند رہنے سے شہری پریشان ، رات کے وقت بجلی کی طویل بندش گیپکو انتظامیہ کی نااہلی ہے ، شراکت علی شہزاد رہنما پی ٹی آئی ، ٹرانسفارمر تبدیلی کیلئے پرمٹ لیا تھا ، گیپکو انتظامیہ۔

تفصیلات کیمطابق بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب گیپکو انتظامیہ نے ملک وال سٹی اور میانی فیڈرز کی بجلی رات 9.15 بجے بند کر دی جسے رات ڈیڑھ بجے بحال کیا گیا بجلی کی طویل بندش کے باعث شہری پریشان رہے کئی گھروں میں شادی کی تقریبات تھیں ، بجلی کی طویل بندش کی وجہ سے متاثرہ خاندانوں کی شدید پریشانی اور مشکلات کا سامنا کرنا پڑا.

یہ بھی پڑھیں
گرڈ اسٹیشن منڈی بہائوالدین میں مرمت کے سلسلہ میں منڈی بہائوالدین کے 11 کے.وی فیڈر کی بجلی 4 مارچ سے 1 اپریل 2019 تک مختلف اوقات میں بند رہے گی

ذرائع کیمطابق گیپکو انتظامیہ ملک وال نے رضا آباد کی ایک بااثر شخصیت کے کہنے پر ٹرانسفارمر تبدیل کا کام رات 9بجے شروع کیا جو رات ڈیڑھ بجے تک جاری رہا اس طرح شہریوں کو طویل بریک ڈاؤن کا سامنا کرنا پڑا ،پی ٹی آئی کے رہنما و سابق صدر شراکت علی شہزاد نے بجلی کے بریک ڈاؤن پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ کچھ عناصر ایسی حرکتوں سے ہماری حکومت کو بدنام کرنا چاہتے ہیں

انہوں وفاقی وزیر پانی و بجلی سے مطالبہ کیا ہے کہ ذمہ دار گیپکو افسران کیخلاف کاروائی کی جائے ، رابطہ کرنے پر گیپکو ذرائع نے کہا کہ ٹرانسفارمر تبدیلی کی وجہ سے بجلی کی بندش کیلئے پرمٹ لے رکھا تھا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں