35

دنیا بھر کی طرح منڈی بہاوالدین میں بھی کینسر سے بچاؤ کا عالمی دن منایا گیا. عوام الناس میں اس خطرناک اور جان لیوا مرض سے آگاہی اور اس سے بچاؤ کے متعلق سیمینار اور واک کا اہتمام بھی کیا گیا

منڈی بہاؤالدین ( ایم بی ڈین نیوز ) دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی کینسر سے بچاؤ کا عالمی دن منایاگیا۔ اس دن کو منانے کا مقصد عوام الناس میں اس خطرناک اور جان لیوا مرض سے آگاہی اور اس سے بچاؤ کے متعلق شعور پیدا کرنا ہے۔ کینسر کے عالمی دن کے موقع پر ضلع منڈی بہاؤالدین کے تمام ہسپتالوں ،رورل ہیلتھ سنٹرز،محکمہ صحت کے دفاتر میں کینسر ڈے منایا گیا اور آگاہی واک اور تقریبات کا انعقاد کیاگیا۔

ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی کے زیر اہتمام کینسر سے آگاہی کے سلسلہ میں ضلع کی مرکزی تقریب ٹی ایم اے ہال منڈی بہاؤالدین میں منعقد کی گئی۔ جس میں ڈی ایچ او ڈاکٹر افتخار احمد، محکمہ صحت کے افسران ، ماہرین ڈاکٹرز نیوٹریشن کے علاوہ لوگوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

ڈی ایچ او ڈاکٹر افتخار احمد نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عالمی ادارہ صحت ڈبلیو ایچ او کے مطابق دنیا بھر میں ہونے والے اموات کی دوسری بڑی وجہ کینسر ہے۔ سال 2018میں 96لاکھ افراد کینسر کے باعث زندگی کی بازی ہار گئے۔ جبکہ پاکستان میں سالانہ تقریباََ ڈیڑھ لاکھ افراد کینسر کا شکارہوتے ہیں۔ کینسر سے بچاؤ کیلئے موثر آگاہی انتہائی اہم ہے اور ابتدائی سطح پر تشخیص ہونے سے کینسرکا علاج ممکن ہے۔ کینسر کے عالمی دن کو منانے کا مقصد اس مرض کی علامات ،تشخیص ،احتیاطی تدابیر اور علاج سے عوام کو آگاہی فراہم کرنا ہے۔ کیونکہ بروقت تشخیص موثر علاج ، احتیاطی تدابیراور بہتر غذاکے استعمال سے اس مرض سے بچاؤ ممکن ہے۔ ۔

یہ ویڈیو بھی دیکھیں
کینسر کا عالمی دن، ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال منڈی بہاوالدین میں آگاہی واک اور سیمینار کا انعقاد کیا گیا، ویڈیو دیکھیں

ڈاکٹر افتخار احمد نے کہاکہ ہم روزمرہ زندگی میں اپنا طرز زندگی تبدیل کرکے اور محتاط رویہ اپنا کر کینسر اور ایسے ہی دوسرے موذی امراض سے بچ سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کینسر کی بڑی وجوہات میں شراب نوشی ، تمباکو نوشی ، پان ، سگریٹ ، چھالیہ، گٹکا ،انرجی ڈرنکس، غیر متوازن خوراک اور سہل پسند طرز زندگی شامل ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ کینسر کی علامات میں مسلسل سانس کا پھولنا ،گلے سے خرخراہٹ کی آواز ، دائمی کھانسی ، سینے میں مستقل درد ،مسلسل بخار، کھانا نگلنے میں مشکل ، جسم کے کسی حصے میں سوجن یا گلٹی کا نکلنا ،اکثر خون کا اخراج ،کمزوری ،تھکاوٹ ،وزن کا تیزی سے کم ہونا ،بھوک کی کمی ، معدے میں خرابی ،چھاتی میں گلٹی یا سوجن جیسی علامات شامل ہیں اور کینسر سے بچاؤ کا حل متوازن غذا کا استعمال ،روزانہ کی بنیاد پر ورزش اور چہل قدمی کا معمول ،شراب اورتمباکو نوشی سے پرہیز ،تابکار شعاعوں اور ماحولیاتی آلودگی سے بچاؤ کے چند سادہ اصول اپنا کر ہی کینسر جیسے موذی مرض کے لاحق ہونے کے خطرے کو کم کیا جاسکتا ہے۔ اگر احتیاطی تدابیر اختیار نہ کی جائیں تو کینسر سے موت واقع ہوسکتی ہے۔

تقریب سے دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا۔تقریب کے اختتام پر آگاہی واک بھی منعقد کی گئی جس میں تمام مکاتب فکر کے لوگوں نے شرکت کی ۔آگاہی واک میں کینسر سے بچاؤ کے حوالے شرکاء نے بینرز اٹھا رکھے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں