87

ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال کے ٹراما سنٹر میں ایمرجنسی میں لائے جانے والے انتہائی نگہداشت کے مریضوں کو طبی امداد کے فرائض سینیٹری ورکرز اور غیر تربیت یافتہ سٹاف نے سنبھال لئے، ویڈیو دیکھیں

منڈی بہاءالدین:ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال کے ٹراما سنٹر میں ایمرجنسی میں لائے جانے والے انتہائی نگہداشت کے مریضوں کو طبی امداد کے فرائض سینیٹری ورکرز اور غیر تربیت یافتہ سٹاف نے سنبھال لئے. اور ڈاکٹر ڈیوٹی سے غائب ہو گئے ہیں. ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد ڈپٹی کمشنر مہتاب وسیم نے انکوائری کا حکم دے دیا ہے.

ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال کے ٹراما سنٹر میں اسپتال انتظامیہ نے ایمرجنسی کے مریضوں کا علاج کرنے کا انوکھا طریقہ دریافت کرلیاہے گذشتہ روز فائرنگ کے نتیجہ میں زخمی ہونے والے ایک طالب علم کو لایا گیا جسکی مریم پٹی ڈاکٹر کی بجائے سینیٹری ورکر اور زیر تربیت عملہ سرانجام دے رہا ہے جبکہ ڈیوٹی ڈاکٹر غائب ہیں اور اس طرح سرکاری اسپتال میں خاکروب مسیحا بن گئے ہیں.

ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر ڈیوٹی پر آرام کرتے ہیں اور یہ درجہ چہارم کا عملہ ٹراما سنٹر سمیت آپریشن تھیٹر میں بھی سرجن کی طرح کام کرتا ہے میڈیا نے سینٹری ورکر کی ٹراما سنٹر میں مریض کی مرہم پٹی کرتے ہوئے فوٹیج حاصل کرلی گئی. اس صورتحال پر اسپتال انتظامیہ نے موقف دینے سے انکار کردیا ہے. ڈپٹی کمشنر مہتاب وسیم نے انکوائری کا حکم دے دیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں