45

ڈینگی اور خسرہ سے پاک ضلع ترجیح ہے، صرف محکمہ صحت ہی نہیں بلکہ دیگر تمام متعلقہ محکموں اور عوام الناس کی شرکت اور اجتماعی کوششوں سے ہی ان امراض پر قابو پایا جاسکتاہے

منڈی بہاؤالدین ( ایم بی ڈین نیوز ) ڈپٹی کمشنر مہتاب وسیم نے کہا ہے کہ ڈینگی اور خسرہ سے پاک ضلع ترجیح ہے۔صرف محکمہ صحت ہی نہیں بلکہ دیگر تمام متعلقہ محکموں اور عوام الناس کی شرکت اور اجتماعی کوششوں سے ہی ان امراض پر قابو پایا جاسکتاہے۔خسرہ ایک مہلک مرض ہے اس کے تدارک کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں اور اس سلسلے میں کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج یہاں ڈی سی آفس میں محکمہ صحت کے افسران کے ساتھ انسداد ڈینگی اور خسرہ مہم کے حوالے سے منعقدہ ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر محمد علی مفتی، اسسٹنٹ کمشنر پھالیہ رانا محمد جمیل،ڈپٹی ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ چوہدری ظفر محمود گوندل، ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسر وقار احمد، ڈی ایچ او، ڈی ڈی ایچ اوز، فوکل پرسن میڈم رافعیہ ناہید سمیت دیگر متعلقہ محکموں کے افسران بھی موجود تھے۔

ڈپٹی کمشنر نے مزید کہا کہ انسدادخسرہ مہم پر سو فیصد عملدرآمد وقت کی اہم ضرورت ہے اور جسے ہم سب نے مل کراجتماعی کوششوں سے کامیاب بنانا ہے۔ڈسٹرکٹ آفیسر ہیلتھ حافظ افتخار احمد نے اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ انسداد خسرہ مہم 15اکتوبر سے لے کر 27اکتوبر تک چلائی جائیگی۔ اس مہم میں ضلع بھر کے 6ماہ سے 7سال تک کے 258075بچوں کو خسرہ سے بچاؤ کے ٹیکے لگائے جائیں گے۔ اس مہم میں 164ٹیمیں ضلع بھر کی مقرر کردہ پوائنٹس پر بچوں کوٹیکے لگائیں گی جبکہ 78فکسڈ ٹیمیں، 65یو سی ایم اوز اور 24سکل پرسن کے علاوہ اسسٹنٹ اور موبلائرز بھی نہ صرف ٹیموں کی معاونت کرینگے بلکہ انسداد خسرہ کے حوالے سے عوام الناس کو آگاہی فراہم کرینگے۔

اس موقع پر انسداد ڈینگی کے حوالے ڈپٹی کمشنر نے واضح کرتے ہوئے کہا کہ نا صرف محکمہ صحت بلکہ دیگر متعلقہ محکمے اور عوام الناس مشترکہ کاوشوں سے انسداد ڈینگی کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔انہوں نے کہا کہ محکمہ صحت کی انسداد ڈینگی ٹیمیں ان ڈور ،آوٹ ڈور سرویلنس کے کام میں مزید بہتری لائیں کیونکہ منڈی بہاؤالدین کو ڈینگی فری بناناضلعی انتظامیہ کی اولین ترجیح ہے۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ ابھی تک ضلع منڈی بہاؤالدین میں ابھی تک ڈینگی کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا۔ جس پرڈپٹی کمشنر نے ہدایت کی کہ مون سون بارشوں کے موسم میں ڈینگی کی افزائش کے زیادہ امکانات ہوتے ہیں لہذا تمام افسران اور ٹیموں کو مزید محنت اور لگن سے کام کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ انسداد ڈینگی اقدامات پر عمل درآمد میں کسی قسم کی لاپروائی اور فرائض میں غفلت ہرگز برداشت نہیں کی جائیگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں