59

دسویں جماعت کی طالبہ کو زبردستی اغوا کر کے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے والے تین ملزمان کو دو دو بار عمر قید اور 20ہزار روپے جرمانہ کی سزا کا حکم

پھالیہ(نامہ نگار) ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج پھالیہ اورنگزیب نے دسویں جماعت کی طالبہ کو زبردستی اغوا کر کے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے والے تین ملزمان کو جرم ثاب ہوجانے پردو دو بار عمر قید اور 20ہزار روپے جرمانہ کی سزا سنادی۔

استغاثہ کے مطابق پھالیہ کے نواحی موضع گھنیاں میں ملزمان جنید اشرف ، خرم وغیرہ تین افراد نے دسویں جماعت کی طالبہ اریبہ اشرف کو زبردستی اغواء کر کے لیجا کر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا اس کا مقدمہ تھانہ پھالیہ میں درج ہوا ۔

دوران تفتیش تفتیشی آفیسر نے ملزمان کو نابالغ قرار دے کر کیس فارغ کر دیا ۔ متاثرہ طالبہ نے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج پھالیہ کی عدالت میں ممتاز قانون دان افتخار احمد تارڑ کی وساطت سے ملزمان کے خلاف استغاثہ درج کروایا ۔ گزشتہ روز سماعت مکمل ہونے پر ملزمان کے خلاف اغواء اور اجتماعی زیادتی کا الزام ثابت ہو گیا جس پر ایڈیشنل سیشن جج پھالیہ نے تینوں ملزمان کو دو دو دفعہ بیس بیس سال قید اور 20ہزار روپے جرمانہ کی سزا کا حکم دیا۔

متاثرہ طالبہ کے موقف کی ترجمانی افتخار احمد تارڑ ایڈووکیٹ نے کی جب کہ ملزمان کی طرف سے نعمان سعید بھٹی ایڈووکیٹ ، نذیر احمد شیخو ایڈووکیٹ اور شاہ نواز رانجھا ایڈووکیٹ پر مشتمل پینل پیش ہوئے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں