79

بیوٹی پارلرز ،سیلونز اور باربر شاپس کے شعبہ کی ترقی کیلئے پنجاب حکومت کا ان کی رجسٹریشن کا پروگرام صوبہ بھر کی طرح ضلع منڈی بہائوالدین میں بھی جاری ہے

بیوٹی پارلرز ،سیلونز اور باربر شاپس کے شعبہ کی ترقی کیلئے پنجاب حکومت کا ان کی رجسٹریشن کا پروگرام صوبہ بھر کی طرح ضلع منڈی بہائوالدین میں بھی جاری ہے جو کہ 31مارچ تک جاری رہے گا۔ ان خیالات کا اظہار سیکرٹری ڈسٹرکٹ کوالٹی کنٹرول بورڈ منڈی بہائوالدین عظمیٰ مظہر نے کیا۔سیکرٹری کوالٹی کنٹرول بورڈعظمیٰ مظہر نے بتایا کہ پنجاب حکومت نے ہیپاٹائٹس آرڈینینس نافذ کر دیا ہے۔ جس کے تحت تمام ہیئر سیلون، باربر شاپ اوربیوٹی پارلر کے لئے رجسٹریشن کروانا لازمی قرار دیا گیا ہے تا کہ ہیپاٹائٹس کنٹرول پروگرام کو مکمل طور پر نافذ کیا جا سکے۔انہوں نے بتایا کہ رجسٹریشن کروانے پر بیوٹی پارلرز، ہیئر سیلونز اور باربر شاپس کو باقاعدہ لائسنس بھی جاری کئے جا رہے ہیں اور جلد حکومتی سطح پر تربیتی ورکشاپس بھی منعقد ہوں گی۔ عظمیٰ مظہر نے کہا کہ ہیپاٹائٹس آرڈینینس کا نفاذ ہیپاٹائٹس بی، سی اور خون سے پھیلنے والی بیماریوں کے تدارک کے لئے حکومت پنجاب کا ایک اہم اقدام ہے جو کہ بیوٹی پارلر اور حجام مالکان کی ہیپاٹائٹس سے بچائو اور احتیاطی تدابیر کیلئے نافذ کیا گیا ہے۔انہوں نے تمام بیوٹی پارلر اور حجام مالکان کو ہدایت کی ہے کہ وہ معاشرے میں پھیلنے والے ہیپاٹائٹس جیسی موذی مرض کے پھیلائو کو روکنے کے لئے اپنا کردار ادا کریں۔ انہوں نے اپیل کی کہ تمام باربر شاپ/سیلون/بیوٹی پارلر کی 31مارچ 2018تک ذاتی طور پر پیش ہو کر مفت رجسٹریشن کروائیں ۔رجسٹریشن کے لئے اصل شناختی کارڈ کے ہمراہ ڈسٹرکٹ کمپلیکس ،سی ای او ہیلتھ آفس،ڈرگ برانچ میں تشریف لائیں۔31مارچ 2018کے بعد عدم تعاون کی صورت میں متعلقہ آرڈینینس سیکشن 27،28،28،29اور 30کے تحت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ بیوٹی پارلرز،سیلونز اور باربر شاپس کی ایسوسی ایشنز نے حکومت پنجاب کی رجسٹریشن، تربیتی ورکشاپس اور لائسنس جاری کرنے کے اس اقدام کو سراہتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کو خراج تحسین پیش کیا ہے اور کہا ہے کہ حکومت کے رجسٹریشن سے اس شعبہ سے جعل سازی کا خاتمہ ہو گا اور اس سے منسلک لوگوں کے مسائل حل ہوں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں